مظلوم کشمیریوں کی آواز دنیا کے سب سے بالا ایوان میں سنی گئی

مظلوم کشمیریوں کی آواز دنیا کے سب سے بالا ایوان میں سنی گئی

نیویارک : ملیحہ لودھی نے بتایا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس ہمارے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کی خصوصی درخواست پر ہوا

اجلاس طلب کرنے کے لیے چین نے بھی درخواست کی جس پر ان کے شکر گزار ہیں، مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پاکستان سیٹلمنٹ کے لیے تیار ہے کیونکہ یہ انسانی حقوق کا مسئلہ ہے۔
اجلاس کا ہونااس بات کا ثبوت ہے کہ یہ مسئلہ عالمی تنازع ہے، بھارت کا اندرونی معاملہ نہیں، وزیرخارجہ نے کہہ دیا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے یہ پہلا قدم ہے۔
مقبوضہ علاقوں میں انسانی حقوق کی بدترین مثالیں ہیں، مظلوم کشمیریوں کی صدا ان کے ملک میں دبائی گئی لیکن آج دنیانے سن لی۔
سلامتی کونسل اجلاس اقوام متحدہ کی قراردادوں کی توثیق ہے، کشمیر بھارت کا اندرونی مسئلہ نہیں، یہ عالمی مسئلہ ہے۔
بھارت نے سلامتی کونسل اجلاس رکوانے کی باربار کوشش کی، لیکن اسے ناکامی کا سامنا کرنا پڑا، اب یہ سفر مسئلہ کشمیر کے حل پر ہی ختم ہوگا۔
،اب بات یہاں ختم نہیں ہوگی بلکہ جب کشمیریوں کو انصاف مل جائے گا تو پھر بات ختم ہو گی۔
ملیحہ لودھی نے کہا کہ سلامتی کونسل کے تمام اراکین نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا جس پر ان کے شکر گزار ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

طالبان سے جنگ بندی افغان حکام نے سیکڑوں مزید طالبان قیدیوں کو رہا کردیا

طالبان سے جنگ بندی افغان حکام نے سیکڑوں مزید طالبان قیدیوں کو رہا کردیا

بگرام: کشیدگی میں یہ وقفہ تقریبا 19 سال کی جنگ میں دوسری مرتبہ سامنے آیا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے