امریکا اور برطانیہ سمیت مختلف ممالک میں کشمیریوں کے حق میں ریلیاں

امریکا اور برطانیہ سمیت مختلف ممالک میں کشمیریوں کے حق میں ریلیاں

امریکا اور برطانیہ سمیت دنیا کے کئی ممالک میں بھارتی اقدامات کے خلاف اور کشمیریوں کے حق میں ریلیاں نکالی گئیں۔

امریکا میں پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی نے وائٹ ہاؤس کے سامنے احتجاج کیا اور صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے مطالبہ کیا کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو مقبوضہ کشمیر میں لیے گئے حالیہ اقدامات واپس لینے پر مجبور کریں۔

امریکی ریاست کیلی فورنیا میں بھی مسلم کمیونٹی نے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ریلی نکالی جس میں خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کی۔

برطانیہ میں بھارتی ہائی کمیشن اور قونصل خانوں کے باہر احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔

آسٹریلیا کے شہر میلبرن میں بھی مودی سرکار کے اقدامات کے خلاف احتجاج کیا گیا اور دھرنا دیا گیا جس میں سکھ برادری کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔

جرمنی کے شہر برلن کے تاریخی برانڈنبرگ گیٹ کے سامنے کشمیری برادری نے جرمن، بھارتی اور پاکستانی شہریوں کے ساتھ مل کر ہندو قوم پرست مودی حکومت کے خلاف مظاہرہ کیا۔

بیلجیئم کے دارالحکومت برسلز میں بھی عوام کی بڑی تعداد نے کشمیریوں کے حق میں مظاہرہ کیا۔

کینیڈا اور آئرلینڈ میں بھی کشمیریوں کے اظہار یکجہتی کے لیے ریلیاں نکالی گئیں جس میں عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

بھارت کے دارالحکومت نئی دلی میں بھی بائیں بازو کی جماعتوں اور پروگریسو فرنٹ نے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ریلی نکالی اور بی جے پی کی حکومت سے آرٹیکل 370 کے خاتمے کا فیصلہ واپس لینے کا مطالبہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں

مقبوضہ کشمیر: حریت قیادت کی اپیل پر احتجاج، قابض فوج کی فائرنگ سے کئی مظاہرین زخمی

مقبوضہ کشمیر: حریت قیادت کی اپیل پر احتجاج، قابض فوج کی فائرنگ سے کئی مظاہرین زخمی

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی بربریت اور کرفیو کے باوجود گھروں میں نظربند حریت قیادت کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے