سی این جی اور لیکویفائیڈ پیٹرولیم گیس ایل پی جی کے استعمال پر پابندی عائد کردی

سی این جی اور لیکویفائیڈ پیٹرولیم گیس ایل پی جی کے استعمال پر پابندی عائد کردی

سندھ: موٹروے پولیس نے ایم-1 اور ایم-2 موٹرویز سے گزرنے والی پبلک ٹرانسپورٹ کی ایسی تمام گاڑیوں (پی ایس ویز) کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کردیا تاہم سی این جی مالکان کی ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ وہ اس اقدام کو عدالت میں چیلنج کریں گے

وزارت توانائی، صوبائی حکومتوں، آزاد کشمیر حکومت، پولیس کے اعلیٰ عہدیداران اور سی این جی ایسوسی ایشنز کے نام خط میں اوگرا کا کہنا تھا کہ انہوں نے یہ فیصلہ سندھ اور پنجاب کی حکومت کی تجاویز پر سندھ ہائی کورٹ کے احکامات کے تحت کیا۔
اوگرا نے اپنے مراسلے میں صوبائی حکومتوں اور موٹروے پولیس کے انسپکٹر جنرل سے ایسی تمام پی ایس ویز کے خلاف کریک ڈاؤن کرنے کی درخواست کی جنہوں نے مسافروں کے کمپارٹمنٹ میں سی این جی سلینڈر نصب کیا ہوا ہے اس کا مقصد ان پی ایس ویز میں سفر کرنے والے مسافروں کی قیمتی جانیں محفوظ رکھنا ہے۔
پی ایس ویز میں سی این جی کے استعمال پر پابندی کے علاوہ اوگرا کا کہنا تھا کہ ’ایل پی جی سلینڈرز کے ٹرانسپورٹ گاڑیوں میں استعمال پر مکمل پابندی ہے اور اگر کسی گاڑی میں ایل پی جی سلینڈر پایا گیا تو اس سے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی مدد سے نمٹا جائے گا‘۔
آل پاکستان سی این جی ایسوسی ایشن نے پی ایس ویز وین میں سلینڈر پر پابندی عائد کرنے کے حکومتی فیصلے کو عدالت میں چیلنج کرنے کی دھمکی دی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

عدالت نے آغا سراج کے خلاف ریفرنس کا ٹرائل تیز کرنے کا حکم دیا

عدالت نے آغا سراج کے خلاف ریفرنس کا ٹرائل تیز کرنے کا حکم دیا

کراچی: عدالت نے کہا کہ مفرور ملزمان گرفتار نہ ہوئے تو انہیں کیس سے الگ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے