مویشی منڈی میں آنے والے بیوپاری رل گئے

مویشی منڈی میں آنے والے بیوپاری رل گئے

کراچی: مویشی منڈی میں  آئے ہوئے ایک بیوپاری نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ مویشی منڈی انتظامیہ کی وی وی آئی پی اور وی آئی پی بلاکس اور مین سڑکوں پر جمع ہونے والے پانی کی نکاسی پر توجہ دے رہی ہے

مویشی منڈی کے پچھلے حصوں کے بلاکس میں پانی اور کیچڑ صاف کرنے کا کوئی بندوبست نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے بیوپاریوں کو ازیت ناک صورتحال سے گزرنا پڑ رہا ہے اور وہ اپنی مدد آپ کے تحت ٹریکٹر ٹرالی کی مدد سے منہ مانگی قیمتوں پر پانی اور کیچڑ صاف کرا رہے ہیں تاکہ فروخت کے لیے لائے جانے والے قربانی کے جانوروں کو بیماریوں سے بچایا جا سکے ۔
اشتہاری ایجنسی اور مویشی منڈی کی انتظامیہ کو چلانے میں زمین آسمان کا فرق ہے اور اسی ناتجربہ کاری کی وجہ سے مویشی منڈی کے ٹھیکیدار نے بیوپاریوں کو رلا دیا ہے ، بیوپاری کا کہنا تھا کہ قدم قدم پر پیسے خرچ کرنے کا تمام خرچہ قربانی کے جانور کی قیمت میں شامل کر رہے ہیں۔
بارش اور مویشی منڈی کی ابتر صورتحال کو دیکھتے ہوئے یہ تصور کیا جا رہا ہے کہ شاید بیوپاری پریشانی کے عالم میں قربانی کے جانور کم قیمت پر فروخت کر دینگے لیکن ایسا نہیں ہے ہم سارے ٹیکس اور فیسیں بھرنے کے بعد اپنا نقصان کیسے کر سکتے ہیں کہ بارش سے گھبرا کر کم قیمت پر جانور فروخت کر دیں۔

یہ بھی پڑھیں

طیارہ حادثہ ، ایئرٹریفک کنٹرولر شامل تفتیش

کراچی: پی آئی اے طیارہ حادثے کی تحقیقات کا عمل جاری ہے، ڈیوٹی پر موجود …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے