ایرانی تحویل میں لیے گئے برطانوی تیل بردار جہاز کے عملے میں موجود 12 بھارتیوں میں سے 9 افراد کو چھوڑدیا گیا

نئی دہلی: اس اقدام سے آبنائے ہرمز میں بحری نقل و حمل کے حوالے سے برطانیہ، امریکا اور ایران کی حکومت کے درمیان کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگیا تھا

ایران نے الزام عائد کیا تھا کہ ایم ٹی ریاہ جہاز کو اس وقت قبضے میں لیا گیا جب وہ غیر قانونی ایندھن اسمگل کررہا تھا۔
تیل لےجانے والے ٹینکر کو آن لائن ٹریک کرنے والی ویب سائٹ کے مطابق ایم آر ٹی ریاہ 14 جولائی کو ایرانی پانیوں میں داخل ہوا جس کے فوراً بعد سنگل بھیجنا بند کردیے۔
بھارتی ترجمان دفتر خارجہ رویش کمار نے کہا کہ ’عملے کے 9 ارکان رہا کردیے گئے ہیں اور وہ جلد بھارت کی جانب روانہ ہوجائیں گے‘۔
بھارتی مشن نے عملے کے بقیہ اراکین کی رہائی کے لیے بھی متعلقہ ایرانی حکام سے درخواست کی ہے جن میں 21 بھارتی اور ایرانی شہری شامل ہیں جن میں سے 3 ایم ٹی ریاہ اور 18 برطانیہ کے پرچم بردار ٹینکر اسٹینا امپیرو سے تعلق رکھتے ہیں جسے 19 جولائی کو ایرانی حکام نے قبضے میں لیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

سعودی عرب اور اسرائیل کے درمیان اہم معاہدہ طے پایا گیا

سعودی عرب اور اسرائیل کے درمیان اہم معاہدہ طے پایا گیا

اسرائیل: اسرائیلی حکام کے مطابق موساد کے نام سے مشہور اسرائیلی خفیہ ایجنسی کے چیف، …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے