چیئرمین صادق سنجرانی کے خلاف تحریک عدم اعتماد ناکامی سے دوچار

چیئرمین صادق سنجرانی کے خلاف تحریک عدم اعتماد ناکامی سے دوچار

اسلام آباد:’ہم اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں سے ملاقات ان کی حمایت حاصل کرنے کے لیے نہیں بلکہ مختصر مدت کے سیاسی مقاصد کے لیے غلط مثال قائم کرنے پر خبردار کرنے کے لیے کررہے ہیں

اپوزیشن کے پاس 60 سے زائد سینیٹرز کی حمایت موجود ہے جو تحریک عدم اعتماد کی کامیابی کے لیے درکار 53 کی تعداد سے کہیں زیادہ ہے تو ان کا کہنا تھا کہ ’تصوراتی طور یہ درست ہے لیکن عملی طور پر یہ مختلف ہے کیوں کہ ووٹرز خفیہ رائے شماری میں اپنے ضمیر کے مطابق ووٹ ڈالیں گے۔
تحریک انصاف کسی کو بھی لالچ دینے کی کوشش نہیں کررہی البتہ اپوزیشن کے کچھ اراکین جو چیئرمین کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کیے جانے پر تحفظات رکھتے ہیں جو رابطے میں ہیں۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ ملک کی پارلیمانی تاریخ میں سینیٹ چیئرمین کے خلاف کبھی بھی تحریک عدام اعتماد پیش نہیں کی گئی اور اس تاریخ کو محفوظ رکھنا چاہیے۔
اگر تحریک عدم اعتماد واپس نہیں لی گئی تو آئندہ آنے والے دنوں میں ایسا ہر کچھ ماہ بعد ہونے لگے گا جس سے ایوانِ بالا کو نقصان کو پہنچے گا۔
صدر ملکت عارف علوی کو خط لکھے گا جس میں ان سے یکم اگست کے اجلاس کی سربراہی کے لیے سینیٹ اراکین میں سے کسی کو نامزد کرنے کی درخواست کی جائے گی۔
اس مقصد کے لیے 3 نام صدر کو ارسال کیے جائیں گے جو ان میں سے کسی ایک کو نامزد کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

عمران خان کا دعوی تھا کہ اسٹیل ملز کو وہ چلا کر دکھائیں گے

عمران خان کا دعوی تھا کہ اسٹیل ملز کو وہ چلا کر دکھائیں گے

اسلام آباد: چیئرمین صادق سنجرانی کی سربراہی میں سینیٹ کا اجلاس ہوا تو اپوزیشن کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے