ٹیکس حکام نے مارکیٹ ریٹ پر لانے کے لیے جائیدادوں کی قیمتوں کے تعین پر نظرِ ثانی

ٹیکس حکام نے مارکیٹ ریٹ پر لانے کے لیے جائیدادوں کی قیمتوں کے تعین پر نظرِ ثانی

کراچی: گزشتہ 5 ماہ کے عرصے کے دوران یہ دوسرا موقع ہے جب ٹیکس حکام نے مارکیٹ ریٹ پر لانے کے لیے جائیدادوں کی قیمتوں کے تعین پر نظرِ ثانی کی ہے

 

اس سے قبل فروری میں ایف بی آر نے رہائشی/کمرشل/صنعتی املاک کی قیمتوں پر نظرِ ثانی کرتے ہوئے ان میں ڈپٹی کمشنر کی قیمتوں سے اضافہ کیا تھا۔
ایف بی آر کی ٹیکس کی شرح مارکیٹ ویلیو کے قریباً 80 فیصد تک پہنچ گئی ہے جبکہ صرف چند سال قبل سرکاری ڈپٹی کمشنر (ڈی سی ) ریٹ مارکیٹ ویلیو کے 10 فیصد تھے۔
اس نئے نوٹفکیشن کے تحت کراچی، لاہور، اسلام آباد، گوادر، ایبٹ آباد، بہاولپور، فیصل آباد، گجرات، حیدرآباد، جھنگ، جہلم، مردار، ملتان، پشاور، کوئٹہ، راوالپنڈی، ساہیوال، سرگودھا، گوجرانوالہ اور سکھر کی رہائشی و کمرشل املاک کی قیمتوں پر نظر ثانی کی گئی۔
نئی شرح کے مطابق کراچی میں رہائشی پلاٹس (تعمیر اور غیر تعمیر شدہ) کی مالیت میں کم از کم 8 فیصد سے لے کر 44 فیصد تک کا اضافہ ہوگیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

کراچی میں آج شام پھر تیز آندھی چلنے کا امکان

کراچی میں آج شام پھر تیز آندھی چلنے کا امکان

کراچی: کراچی کاموجودہ درجہ حرارت30ڈگری سینٹی گریڈ اور ہوا میں نمی کاتناسب74فیصد ہے،آج زیادہ سےزیادہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے