پاکستان کرکٹ میں اصلاحات لائیں گے

واشنگٹن: پاکستان کرکٹ میں اصلاحات لائیں گے بلکہ اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ بہترین ٹیلنٹ ابھر کر سامنے آئے

وزیراعظم عمران کا یہ بھی کہنا تھا کہ کرکٹ میں جتنا ٹیلنٹ پاکستان کے پاس ہے وہ دنیا میں کہیں بھی نہیں مگر باصلاحیت کھلاڑیوں کو مواقع نہ ملنے کی وجہ سے اچھی ٹیم نہیں بن سکی۔

ہمارا 2019 کا میگا ایونٹ مایوس کن رہا مگر میرے یہ الفاظ یاد رکھیں کہ اگلے ورلڈ کپ میں ہم ایک پروفیشنل ٹیم میدان میں اتاریں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ آئندہ چند ہفتوں میں نئے ڈومیسٹک کرکٹ نظام کا اعلان کر دیا جائے گا۔

عمران خان ملک میں 6 علاقائی ٹیموں پر مشتمل سسٹم کے خواہاں ہیں، البتہ کئی حلقوں کی جانب سے ڈپارٹمنٹل کرکٹ کے خاتمے کی مخالفت بھی ہورہی ہے۔ وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ ٹیم کی کامیابی میں پروفیشنلزم اور میرٹ انتہائی اہمیت کا حامل ہوتا ہے۔

انھوں نے ایک بار پھر اس سلسلے میں آسٹریلیا کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ دنیائے کرکٹ کی سب سے کامیاب ٹیم کا اعزاز اسے اس لیے حاصل ہے کہ انتہائی پروفیشنل سسٹم میں ٹیلنٹ کو اوپر آنے کا موقع فراہم کیا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

آسٹریلیا نے بھارت اور پاکستان سے پہلی پوزیشن چھین لی

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے ٹیسٹ، ایک روزہ اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کی سالانہ بنیاد پر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے