روس کے ساتھ ڈیل کے بعد ترکی کو سٹیلتھ طیارے دینا ممکن نہیں ہے

روس کے ساتھ ڈیل کے بعد ترکی کو سٹیلتھ طیارے دینا ممکن نہیں ہے

واشنگٹن: امریکی حکام نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ روسی میزائلوں سے ترکی میں موجود نیٹو طیاروں کو نشانہ بنائے جانے کا خطرہ ہے، انقرہ نے غلط، قابل مذمت اور مایوس کن فیصلہ کیا ہے

امریکا کی جانب سے یہ فیصلہ ترکی کے روس سے ایس400میزائل ڈیفنس سسٹم خریدنے پر کیا گیا، جبکہ حکام سخت ردعمل کا بھی اظہار کرچکے ہیں۔
روسی دفاعی میزائل نظام ایس 400 کے آلات کی ترسیل جاری ہے، گذشتہ روز بھی دو پروازیں میزائل کے آلات لے کر ترکی کے ہوائی اڈے پہنچی تھیں۔
دفاعی نظام کی مکمل طور پر ترسیل میں وقت لگ سکتا ہے، میزائل نظام سے متعلق سامان لانے والی پروازوں کی تعداد چھ ہو گئی ہے، ایس فور ہنڈرڈ میزائل کے آلات کی فراہمی جمعہ بارہ جولائی سے شروع ہوئی تھی۔
امریکی صدر ٹرمپ نے خبردار کیا تھا کہ اگر ترکی نے روسی ساختہ ایس-400 میزائل سسٹم کی خریداری کے سمجھوتے پر عملدرآمد جاری رکھا تو انقرہ پر پابندیاں عائد کردی جائیں گی۔

یہ بھی پڑھیں

برطانیہ میں پندرہ جون سے دکانیں کھل جائیں گی

لندن: برطانوی حکومت نے ملک میں لاک ڈاؤن ختم کرنے کا اعلان کردیا وزیراعظم بورس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے