ٹی سی سی کا پاکستان سے مذاکرات کے ذریعے ممکنہ حل کی خواہش کا اظہار

واشنگٹن: ٹیتھیان کاپر کمپنی کی پاکستان کو مذاکرات کی پیشکش

ریکوڈک کیس کا فیصلہ حق میں آنے کے باوجود ٹیتھیان کاپر کمپنی (ٹی سی سی) نے 6 ارب ڈالر ہرجانے پر پاکستان کے ساتھ تصفیہ طلب مذاکرات کے ذریعے ممکنہ حل تک پہنچنے کے لیے بات چیت کی خواہش کا اظہار کردیا۔

ورلڈ بینک کے ثالثی فورم انٹرنیشنل سینٹر فار سیٹلمنٹ آف انویسٹمنٹ ڈسپیوٹس (آئی سی ایس آئی ڈی) نے 2011 میں ریکوڈک منصوبے کی لیز منسوخ کرنے کی وجہ سے ہونے والے نقصان پر کمپنی کی جانب سے پاکستان کے خلاف دائر کردہ دعوے میں ٹی سی سی کو 5 ارب 90 کروڑ ڈالر ہرجانہ ادا کیے جانے کا حکم دیا تھا۔

ٹی سی سی کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ ’ہم مذاکرات کے ذریعے تصفیے کے لیے پاکستان کے ساتھ بات چیت کرنے پر رضا مند ہیں اور تنازع کے حتمی نتیجے تک اپنے کمرشل اور قانونی حقوق کا تحفظ جاری رکھیں گے

واضح رہے کہ ٹیتھیان کاپر کمپنی دنیا کی بڑی کان کن کمپنیوں میں سے ایک بیرک گولڈ کارپوریشن اور اینٹوفیگیسٹا کا مشترکہ منصوبہ ہے۔

اس نقصان میں کان کنی کی لیز منسوخ کیے جانے کے وقت ریکوڈک منصوبے کی فیئر مارکیٹ ویلیو کا معاوضہ 4 ارب 8 کروڑ 70 لاکھ ڈالر اور ایک ارب 75 کروڑ 30 لاکھ ڈالر سود شامل ہے۔

ٹریبیونل نے حکومت پاکستان کو کیس کے دوران ٹی سی سی کے ہونے والے اخراجات کی مد میں 6 کروڑ 20 لاکھ ڈالر کی رقم بھی ادا کرنے کا حکم دیا جو ہرجانے میں شامل ہے۔

ایک بیان جاری کرتے ہوئے اینٹوفیگیسٹا کے چیف ایگزیکٹو افسر کا کہنا تھا کہ ’ہمیں 7 سال سے زائد عرصے کے بعد ہمیں اس سنگِ میل تک پہنچنے پر خوشی محسوس ہورہی ہے‘۔

یہ بھی پڑھیں

براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 2 ماہ میں 58 فیصد تک کمی

براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 2 ماہ میں 58 فیصد تک کمی

کراچی: اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری ہونے والے ڈیٹا کے مطابق جولائی اور اگست …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے