صدیوں سے یہ قبائل اسی طرح ایک دوسرے سے لڑ رہے ہیں

صدیوں سے یہ قبائل اسی طرح ایک دوسرے سے لڑ رہے ہیں

اوشیانا: اس پہاڑی علاقے میں صدیوں سے یہ قبائل اسی طرح ایک دوسرے سے لڑ رہے ہیں تاہم موجودہ دور میں خود کار ہھتیاروں کے ایجاد ہونے کے بعد یہ تصادم اور بھی مہلک ہوچکے ہیں

صوبے ہیلا کے منتظم ولیم بانڈو کا کہنا تھا کہ فسادات کے دوران مارے جانے والے افراد کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہم اب بھی ان علاقوں میں موجود اپنے حکام سے معاملات پر بریفنگ کے انتظار میں ہیں۔
ولیم بانڈو نے یہ بھی بتایا کہ فسادات کے شکار علاقوں سے اپنے 40 افسران کو نکالنے کے لیے ایک سو سے زائد پولیس اہلکاروں کو وہاں تعینات کیا جائے گا۔
مذکورہ واقعے نے پورے پاپوا نیو گنی اور اس کے وزیراعظم جیمز ماراپے کو صدمے سے دوچار کر دیا کیونکہ وزیراعظم کے حلقے میں ہی ان افراد کا قتل ہوا۔
وزیراعظم نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ یہ ان کے لیے ایک انتہائی غم کا دن ہے، میرے حلقے میں خواتین اور بچوں کو بہیمانہ قتل کر دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں

افغان صدر پر چیف ایگزیکٹیو کا الزام

افغان صدر پر چیف ایگزیکٹیو کا الزام

افغانستان کے چیف ایگزیکٹیوعبداللہ عبداللہ نے صدر اشرف غنی پر انتخابی مہم کے دوران سرکاری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے