خام مال کے درآمدکاروں کی سہولت کے لیے خودکار طریقہ کار کی پیشکش

خام مال کے درآمدکاروں کی سہولت کے لیے خودکار طریقہ کار کی پیشکش

اسلام آباد: پیش کیے گئے طریقہ کار کا مقصد انکم ٹیکس آرڈیننس 2001 کے سیکشن 148 کے تحت ٹیکس سے استثنیٰ کے سرٹفکیٹ جاری کرنے کے نظام میں بہتری لانا ہے

نیا نظام خودکار میکانزم پر مبنی ہوگا جس کے ذریعے سرٹفکیٹ کے اجراء میں غیر ضروری تاخیر کو کم کیا جاسکے گا۔
طریقہ کار کے تحت پبلک/پرائیوٹ لمیٹڈ کمپنیاں معلومات آن لائن فراہم کریں گی جس پر مزید کارروائی سسٹم کے ذریعے کی جائے گی۔
انکم ٹیکس کمشنر پبلک لمیٹڈ کمپنیوں کے لیے ٹیکس سے استثنیٰ کا سرٹفکیٹ خودکار نظام کے تحت درخواست جمع کرانے کے 7 روز میں جاری کریں گے جبکہ نجی کمپنیوں کے لیے 10 دن میں اور دیگر کے لیے 15 روز میں جاری کیے جائیں گے۔
اگر کمشنر مقررہ وقت میں درخواست پر عمل کرنے میں ناکام رہے تو سسٹم خود سے ٹیکس دینے والوں کو سرٹفکیٹ جاری کردے گا تاہم پبلک اور پرائیوٹ لمیٹڈ کمپنیوں کے علاوہ تمام افراد کو جاری کیے گئے ٹیکس سے استثنیٰ کے سرٹفکیٹ عارضی ہوں گے۔
اگر کمشنر کی جانب سے درخواست جمع کرانے کے 7 روز میں اسائنمنٹ جاری کردیا جائے تو اس صورت میں سسٹم خود سے سرٹفیکٹ جاری نہیں کرے گا۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان، افغانستان میں ہونے والے حالیہ دہشت گردی بے بنیاد الزامات مسترد

پاکستان، افغانستان میں ہونے والے حالیہ دہشت گردی بے بنیاد الزامات مسترد

اسلام آباد: این ڈی ایس کی جانب سے ایک بیان میں دعویٰ کیا گیا تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے