صارفین کا ڈیٹا ’ذاتی ملکیت‘ ہوتی ہے جسے افشاں نہیں کیا جاسکتا

صارفین کا ڈیٹا ’ذاتی ملکیت‘ ہوتی ہے جسے افشاں نہیں کیا جاسکتا

لندن: برطانیہ کے انفارمیشن کمشنر آفس کی جانب سے برٹش ایئر ویز کو صارفین کا ڈیٹا محفوظ رکھنے کے قوانین کے تحت 183 ملین پاؤنڈز کے جرمانے کا نوٹس بھیج دیا گیا

جرمانہ برٹش ایئرویز کے 2017ء کی سالانہ کمائی کا 1.5 فیصد ہے۔ برطانوی قوانین کے تحت صارفین کا ڈیٹا چوری ہونے پر سالانہ آمدنی کا 4 فیصد تک جرمانہ عائد کیا جا سکتا ہے تاہم کمپنی نے جرمانہ کم کرنے کے لیے اپیل دائر کی ہے۔
انفارمیشن کمشنر کی جانب سے جاری نوٹس میں کہا گیا ہے کہ صارفین کا ڈیٹا ’ذاتی ملکیت‘ ہوتی ہے جسے افشاں نہیں کیا جاسکتا اور ڈیٹا کو لیک یا چوری ہونے سے بچانے کے لیے تمام ضروری اقدامات کرنا ہوتے ہیں جس میں برٹش ایئرویز کو ناکام پایا گیا۔
گزشتہ برس جون میں ہیکرز نے برٹش ایئرویز کے کمپیوٹر نظام پر سائبر حملہ کرکے 5 لاکھ سے زائد صارفین کا ڈیٹا چوری کرلیا تھا جس میں صارفین کے بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات بھی شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

برطانوی تیل بردار جہاز کو عالمی قوانین کی خلاف کرنے کے الزام میں قبضے میں لے لیا

برطانوی تیل بردار جہاز کو عالمی قوانین کی خلاف کرنے کے الزام میں قبضے میں لے لیا

تہران: ایرانی رضاکار فورس بیسج (سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی) کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے