اینگرو پاورجین تھر پرائیوٹ لمیٹڈ (ای پی ٹی ایل) پاور پلانٹ کا معائنہ مکمل

اینگرو پاورجین تھر پرائیوٹ لمیٹڈ (ای پی ٹی ایل) پاور پلانٹ کا معائنہ مکمل

اسلام آباد: ای پی ٹی ایل اینگرو اینرجی اور سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی (ایس ای سی ایم سی) کی ملکیت رکھنے والی کمپنی ہے جو سندھ حکومت اور اینگرو اینرجی کے اشتراک سے بنی ہے

ریکارڈ وقت، شیڈول کے مطابق اور لاگت کے تخمینے کے اندر تعمیر ہونے والا تھر کول منصوبہ پاک چین اقتصادی راہداری کا حصہ ہے۔
کوئلہ کی کان کنی اور پاور پلانٹ منصوبے کا آغاز 2016 میں اینگرو اینرجی کی قیادت میں سندھ حکومت، تھل لمیٹڈ، حبیب بینک، حب کو، اسٹیٹ پاور انویسٹمنٹ کارپوریشن چائنہ، چائنہ مشینری انجینیئرنگ کارپوریشن سمیت دیگر کمرشل شراکت داروں کی مدد سے ہوا تھا۔
ایس ای سی ایم سی نے جون 2018 میں کوئلہ کی پہلی تہہ دریافت کی تھی۔
ای پی ٹی ایل نے اپریل 2019 میں دو 330 میگا واٹ کے پاور پلانٹ کا افتتاح کیا تھا اور اس سے پیدا ہونے والی بجلی کو قومی گرڈ میں شامل کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان، افغانستان میں ہونے والے حالیہ دہشت گردی بے بنیاد الزامات مسترد

پاکستان، افغانستان میں ہونے والے حالیہ دہشت گردی بے بنیاد الزامات مسترد

اسلام آباد: این ڈی ایس کی جانب سے ایک بیان میں دعویٰ کیا گیا تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے