بجلی کی قیمت میں 2 روپے کمی

نیپرا نے بجلی کی ستمبر کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی درخواست پر سماعت کے بعد فی یونٹ بجلی 2 روپے 77 پیسے سستی کرنے کی منظوری دے دی۔ سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی نے ستمبر کے لیے بجلی سستی کرنے کی درخواست کی تھی۔

چیئرمین نیپرا طارق سدوزئی نے نیشنل پاور کنٹرول سینٹر حکام سے استفسار کیا کہ ملک میں بجلی ہونے کے باوجود 6 سے 8 گھنٹے لوڈ شیڈنگ کیوں کی جا رہی ہے۔ چیف انجینیئر نیشنل پاور کنٹرول امان اللہ نے بتایا کہ لوڈ شیڈنگ حکومت کی پالیسی ہے۔

چیئرمین نیپرا نے کہا کہ آپ بجلی کی مجموعی صلاحیت کا 51 فیصد پیدا کر رہے ہیں۔ بجلی موجود ہونے کے باوجود خواہ مخواہ عوام کو تکلیف میں رکھا ہوا ہے۔ ملک میں گیس اور فرنس آئل پر پاور پلانٹ کو پوری صلاحیت پر چلانے کے بجائے ڈیزل پر کیوں چلایا جارہا ہے، اس کا تحریری جواب دیا جائے۔

چیئرمین نیپرا کا کہنا تھا کہ نندی پور پاور پلانٹ کے ٹیرف سے متعلق ہم نظر ثانی کی تمام درخواستیں مسترد کر چکے ہیں۔ انہوں نے استفسار کیا کہ حکومت اس کا ٹیرف کیوں جاری نہیں کرتی۔

یہ بھی پڑھیں

افغانستان کو عالمی دہشت گردی کا محرک نہ بننے دینے کی ضمانت

افغانستان کو عالمی دہشت گردی کا محرک نہ بننے دینے کی ضمانت

پشاور: قطر کے دارالحکومت دوحہ میں امریکا کے ساتھ ہونے والے مذاکرات کے نویں دور …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے