مشتاق سکھیرا,وفاقی ٹیکس محتسب برطرفی کا, حکومتی نوٹفکیشن, معطل

مشتاق سکھیراوفاقی ٹیکس محتسب برطرفی کا حکومتی نوٹفکیشن معطل

اسلام آباد: ہائی کورٹ نے مشتاق سکھیرا کی بطور وفاقی ٹیکس محتسب برطرفی کا حکومتی نوٹفکیشن معطل کرتے ہوئے صدر مملکت، وزیر اعظم اور سیکریٹری قانون سے اس معاملے کی رپورٹ طللب کرلی

 

جسٹس اطہرمن اللہ نے مشتاق سکھیرا کو آئندہ سماعت تک اپنے عہدے پر کام کرنے سے روک دیا ہے۔
وزارت قانون نے ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے مشتاق سکھیرا کی وفاقی ٹیکس محتسب کے عہدے پر تقرری ختم کردی تھی۔
جس پر انہوں نے اپنی وکیل زینب جنجوعہ کے ذریعے اس حکومت اقدام کو عدالت میں چیلنج کردیا تھا جنہوں نے عدالت میں درخواست جمع کروائی کہ وفاقی ٹیک محتسب کی تقرری اور برطرفی ایف ٹی او آرڈیننس 2000 اور وفاقی محتسب ادارہ اصلاحاتی قوانین 2013 کے تحت کی گئی۔
ایف ٹو او آرڈیننس 2000 کی دفعہ5، 6(2) کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے موقف اختیار کیا کہ ایک مرتبہ جب وفاقی محتسب اپنے عہدے کا حلف اٹھالے تو اسے صرف سپریم جوڈیشل کونسل کے ذریعے ہی برطرف کیا جاسکتا ہے۔
وزارت قانون نے اس معاملے کو سپریم جوڈیشل کونسل کے پاس نہیں بھجوایا اور ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے ان کی تقرری کو غلط قرار دے دیا۔
جسٹس اطہر من اللہ نے صدر، وزیراعظم اور سیکریٹری قانون سے 15 یوم میں جواب طلب کرلیا اس کے علاوہ اٹارنی جنرل پاکستان کو بھی نوٹس بھیجتے ہوئے سماعت 24 جون تک ملتوی کردی۔

یہ بھی پڑھیں

سپریم کورٹ سے یہ صادق اور امین نہ ہونے کا سرٹیفکیٹ لے چکے ہیں

سپریم کورٹ سے یہ صادق اور امین نہ ہونے کا سرٹیفکیٹ لے چکے ہیں

اسلام آباد: وزیراعظم کے معاون خصوصی احتساب شہزاد اکبر اور اٹارنی جنرل انور منصور خان …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے