برہنہ حالت میں سڑک پرآنیوالی لڑکی سے متعلق انکشاف

گزشتہ دنوں اسلام آباد کی سڑک پربرہنہ حالت میں آنیوالی لڑکی کی ویڈیوانٹرنیٹ پروائرل ہونے کے بعد آئی جی اسلام آباد نے تفصیلات جاری کردی ہیں اور انکشاف کیا ہے کہ لڑکی کا ذہنی توازن درست نہیںتھا اور پولیس نے اسے ورثاءتک پہنچادیا،مجھے ایسے تمام لوگوں پرافسوس ہے .

جنہوں نے تصاویراورویڈیوزانٹرنیٹ پراپ لوڈکردیں اور متعلقہ فیملیز کیلئے بے عزتی کاباعث بنے، ہم سب کو شرم آنی چاہیے جو اسے شیئردرشیئرکررہے ہیں۔
اپنے ایک بیان میں آئی جی اسلام آباد طارق مسعود یاسین نے کہاکہ اللہ تعالیٰ نے قرآن مجیدمیں بھی دوسروں کے رازوں کی پردہ پوشی کاحکم دیا، 30سال سے زائدعمرکی خاتون کاویڈیوکلپ سوشل میڈیا پروائرل ہورہاہے ، اس کادماغی توازن ٹھیک نہیںتھا اور کبھی کبھی ہوش وحواس کھوبیٹھتی ہے، وہ فرانس کے ویزہ کیلئے اسلام آبادآئی تھی لیکن صحت کامسئلہ درپیش آنے پر مری کی طرف جانیوالی ملحقہ سڑک پرآگئی۔13اکتوبرکوخاتون نے کپڑے اتارے اورپلاسٹک کونز پھینکتے ہوئے گاڑیوں کے پیچھے بھاگناشروع کردیا۔
اُنہوں نے بتایاکہ پولیس موقع پرپہنچی اوراسے شال میں لپیٹا، ویمن سٹیشن منتقل کیا اوربعدازاں فیملی سے رابطہ کرکے سپردکردی گئی۔دماغی صحت کے بارے میں علم ہونے کے باوجود بعض لوگوں نے ویڈیوز بنائیں اور سوشل میڈیاپراپ لوڈکردیں، یہ پولیس ہی تھی جس نے اسے ڈھانپنے کی کوشش کی حتیٰ کہ میڈیاتک بھی خبرنہ پہنچ سکی تاکہ خاندان کوشرمندگی سے بچایاجاسکے لیکن بڑے افسوس کی بات ہے کہ کچھ لوگوں نے ویڈیوز اورتصاویراپ لوڈ کردیں۔اگریہ ہم میں سے کسی کے ساتھ یاہماری خواتین کیساتھ ہوا ہوجودماغی عدم توازن کی وجہ سے عوامی مقام پرآجائے توہمارے اوپر پھرکیاگزرے گی، مہربانی کرکے ویڈیوشیئرکرناچھوڑیں اورکسی کوبھی ملے تووہ اسے ڈیلیٹ کردیں۔
اُنہوں نے خاندان کومزیدشرمندگی سے بچانے کی درخواست کرتے ہوئے کہاکہ اگرآپ جانتے بھی ہیں تو خاتون کانام اورپتہ نہ لکھیں اورایک ذمہ دارشہری ہونے کاثبوت دیں۔اگرآپ کوکہیں ویڈیویاتصویرملتی ہے تویہ تحریرکاپی کرکے اس کے نیچے پھینک دیں،شاید کسی کو احساس ہوجائے۔

یہ بھی پڑھیں

افغانستان کو عالمی دہشت گردی کا محرک نہ بننے دینے کی ضمانت

افغانستان کو عالمی دہشت گردی کا محرک نہ بننے دینے کی ضمانت

پشاور: قطر کے دارالحکومت دوحہ میں امریکا کے ساتھ ہونے والے مذاکرات کے نویں دور …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے