عورت مارچ, اسلامی اقدار, کے خلاف ہے, اور آئین قانون, کے بھی, منافی ہے

عورت مارچ اسلامی اقدار کے خلاف ہے اور آئین قانون کے بھی منافی ہے

لاہور: ایڈیشنل سیشن جج عامر حبیب نے ایڈووکیٹ اظہر صدیق کی درخواست پر سماعت کی اور عدالت نے سی سی پی او لاہور اور کمپلینٹ ریڈرسل سیل کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب کر لیا

درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ 9 مارچ کو خواتین کی جانب سے عورت مارچ کا انعقاد کیا گیا، جس میں ‘خواتین نے اخلاقیات سے گرے ہوئے نعرے لگائے اور بینرز آویزاں کیے’۔
وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ عورت مارچ اسلامی اقدار کے خلاف ہے اور آئین قانون کے بھی منافی ہے۔
درخواست میں استدعا کی گئی کہ عدالت عورت مارچ میں حصہ لینے والی خواتین اور عورت مارچ منعقد کروانے والی انتظامیہ کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے۔
عدالت نے درخواست سماعت کے لیے منظور کرلی اور متعلقہ فریقین کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے اس کی سماعت 14 مئی کے لیے مقرر کردی۔

یہ بھی پڑھیں

حکومت طلال کے ایشو پر پوائنٹ اسکورنگ کررہی ہے

حکومت طلال کے ایشو پر پوائنٹ اسکورنگ کررہی ہے

لاہور: رانا ثنا اللہ نے کہا کہ طلال چوہدری پر شفاف تحقیقات کرکے عوام کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے