نگلہ دیش اور چین کے درمیان 13.6 ارب ڈالر مالیت کے معاہدوں پر دستخط

فیڈریشن آف چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر عبدالمطلوب احمد کے مطابق چینی صدر شی جن پنگ کے مختصر دورے کے اختتام پر دونوں ملکوں کے کاروباری اداروں کے درمیان 13.6 ارب ڈالر کے تجارتی اور سرمایہ کاری کے معاہدوں پر دستخط کیے گئے۔

انھوں نے کہا کہ یہ معاہدے دونوں حکومتوں کے درمیان 20 ارب ڈالر قرض کے معاہدے کے علاوہ ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ یہ تجارتی و سرمایہ کاری معاہدے دونوں ملکوں کے کاروباری اداروں کے درمیان کیے گئے تاہم ان میں بعض سرکاری ادارے اور نجی کمپنیاں بھی شامل ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ تجارتی و سرمایہ کاری معاہدے بنگلہ دیشی حکومت کے عسکریت پسندوں کیخلاف کریک ڈاؤن کے نتیجے میں ہونے والی پُرامن صورتحال کے غماز ہیں۔

معاہدے پر دستخط چین کے صدر شی جن پنگ کے دورہ بنگلہ دیش کے موقع پر ہوئے ہیں، وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد سے ملاقات کے بعد چینی صدر کا کہنا تھا کہ انکا دورہ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کے حوالے سے تاریخی موڑ ہے، انہوں نے امید ظاہر کی کہ ان کے دورے سے دونوں ممالک کے تعلقات مزید فروغ پائیں گے۔ ملاقات کے بعد بنگلہ دیش کے ایک سینئر وزیر  کا کہنا تھا کہ چین ریلوے، سڑکوں کی تعمیر اور نئے صنعتی پارک کی تعمیر کیلئے بنگلہ دیش کو 20ارب ڈالر کا قرضہ دے گا

واضح رہے کہ چینی صدر دو روزہ دورہ پر بنگلہ دیش پہنچے تو انہیں  اکیس توپوں کی سلامی دی گئی اور بنگلہ دیش کے صدر عبدالحامد نے ان کا سرکاری طور پر استقبال کیا، گذشتہ تیس برسوں میں چین کے کسی بھی صدر کا یہ پہلا دورۂ بنگلہ دیش ہے۔

یہ بھی پڑھیں

مودی کو یو اے ای کے سب سے بڑے سویلین ایوارڈ سے نواز دیا گیا

ابو ظہبی: متحدہ عرب امارات نے بھارتی وزیراعطم نریندر مودی کو ملک کے سب سے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے