مخنث ,افراد کے, لیے صحت, کارڈ جاری کردیا

مخنث افراد کے لیے صحت کارڈ جاری کردیا

خیبرپختونخوا: خواجہ سراؤں کے صحت انصاف کارڈ کے اجرا کے لیے ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں اس پروگرام کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ریاض تنولی سمیت دیگر اہم شخصیات نے شرکت کی

ہمارے معاشرے میں خواجہ سرا کو صحت کے حصول کے لیے پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے تاہم محکمہ صحت کی جانب سے انصاف صحت کارڈ کے اجرا کے بعد ان کی یہ محرومی ختم ہوجائے گی۔
تقریب کے منتظم کا کہنا تھا کہ نئے منصوبے کے مطابق ان صحت کارڈ کی مدد سے خواجہ سرا ایچ آئی وی ایڈز اور کینسر جیسی مہلک بیماریوں کے لیے ٹیسٹ اور علاج کرواسکتے ہیں۔
صحت انصاف کارڈ کی مدد سے ایک گھرانے کو 4 لاکھ روپے کی سہولت فراہم کرے گا جس میں وہ امراض قلب، ذیباطس، ایمرجنسی، سر اور ریڑھ کی ہڈی میں فریکچر اور جوڑوں کی تبدیلی کے لیے سرجری کے اخراجات میں استعمال کر سکتے ہیں۔
ٹرانز ایکشن الائنس کے صدر فرزانہ جان نے کہا کہ ٹرانس جینڈر پرسنز پروٹیکشن آف رائٹ ایکٹ 2018 کے مطابق خواجہ سرا کو صحت کی سہولیات نہ دینا غیرقانونی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

چترال میں بروغل کے مقام پر 5 برطانوی کوہ پیما حادثے کا شکار

چترال میں بروغل کے مقام پر 5 برطانوی کوہ پیما حادثے کا شکار

چترال: ضلعی انتظامیہ کے مطابق کوہ پیما چترال کے دورافتادہ علاقے بروغل میں کھویو نامی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے