ماہرہ خان بدستور فلم ’رئیس‘ کا حصہ

فلم ’رئیس‘ کے ڈائریکٹر رتیش سدھوانی نے ماہرہ خان کو فلم سے نکالے جانے کی افواہوں کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماہرہ خان فلم میں بدستور موجود ہیں۔

ایک بھارتی ویب سائٹ کے مطابق رئیس کے ڈائریکٹر رتیش سدھوانی نے اس امر پر حیرانی کا اظہار کیا کہ اس قسم کی افواہیں کیوں اور کہاں سے اٹھ رہی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ماہرہ خان پر فلمایا جانے والا حصہ 45 دن میں مکمل ہوا اور اب فلم مکمل ہوچکی ہے۔

رتیش سدھوانی کا کہنا تھا کہ اس سے قبل انہوں نے ان افواہوں پر کوئی ردعمل اس لیے نہیں دیا کیونکہ یہ اس لایعنی بحث کو مزید ہوا دینے کے مترادف ہوتا۔ انہوں نے بتایا کہ وہ فلم کو مقررہ تاریخ پر ریلیز کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔

واضح رہے اس سے قبل بھارتی میڈیا نےماہرہ خان کو فلم ’رئیس‘ سے نکال دیا گیا ہے۔

دوسری جانب بھارتی انتہا پسندوں کی دھمکیوں کے باعث فواد خان کو بھی فلمسے نکال دیا گیا تاہم وہ بدستور ’اے دل ہے مشکل‘ میں موجود ہیں اور ذرائع کے مطابق سنسر بورڈ نے ان کا کوئی منظر حذف نہیں کیا۔

بھارتی انتہا پسندوں نے پاکستانی فنکاروں کے ساتھ کام کرنے والے ہدایت کاروں کرن جوہر اور مہیش بٹ کودی ہیں۔ انتہا پسندوں نے یہ بھی اعلان کیا ہے کہ جب تک ’رئیس‘ اور ’اے دل ہے مشکل‘ سے پاکستانی اداکاروں کے مناظر نہیں نکالے جائیں گے اس وقت تک وہ ان فلموں کو ریلیز نہیں ہونے دیں گے۔

 

یہ بھی پڑھیں

الی ووڈ کی لیجنڈری اداکارہ شبانہ اعظمی کی حالت کو ڈاکٹرز نے خطرے سے باہر قرار دے کر انہیں آئی سی یو سے وارڈ میں منتقل کردیا

الی ووڈ کی لیجنڈری اداکارہ شبانہ اعظمی کی حالت کو ڈاکٹرز نے خطرے سے باہر قرار دے دیا

ممبئی: بالی ووڈ کی لیجنڈری اداکارہ شبانہ اعظمی کی حالت کو ڈاکٹرز نے خطرے سے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے