پاکستان, کی فضائی, حدود کی, پابندی کا, کوئی خاتمہ, نہیں ہوا

پاکستان کی فضائی حدود کی پابندی کا کوئی خاتمہ نہیں ہوا

واشنگٹن: پاکستان کی فضائی حدود کی پابندی کا کوئی خاتمہ نہیں ہوا‘ کے عنوان سے رپورٹ میں گروپ نے تخمینہ لگایا کہ فضائی حدود کی بندش سے یومیہ تقریباََ 350 پروازیں متاثر ہورہی ہیں

او پی ایس گروپ کی جانب سے حساب انٹرنیشنل سول ایوی ایشن آرگنائزیشن کی جانب سے فراہم کیے گئے اعداد و شمار کو استعمال کرتے ہوئے لگایا گیا
رائٹرز کی جانب سے بنائے گئے ریجنل فلائٹس کے نقشے میں بتایا گیا تھا کہ پابندی سے یورپ میں 4 اور جنوب مشرقی ایشیا میں 4 ایئرپورٹس کے درمیان کم از کم 311 پروازیں متاثر ہورہی ہیں۔
بھارت کی جانب سے فروری کے آخر میں شمالی پاکستان کے حصوں میں فضائی حملوں کی کوشش کے بعد سے پاکستان نے اپنی فضائی حدود کو محدود کردیا تھا، ان پابندیوں میں سے زیادہ تر فروری سے نافذ ہیں جو کم از کم 15 مئی تک موثر رہیں گی۔
پاکستان ایک اہم فضائی کوریڈور کے وسط میں واقع ہے، بھارت کے لیے پروازوں کو اکثر براہ راست پاکستان سے اور کچھ کو کشمیر کے بہت قریب سے گزرنا پڑتا ہے، جہاں فروری میں پاکستان اور بھارت کے درمیان فضائی محاذ ہوا تھا۔
لائٹ راڈار 24 کے مطابق سنگاپور ایئرلائنز، برٹش ایئرویز، لفتھانسا اور تھائی ایئرویز ان ایئرلائنز میں شامل ہیں، جن کی پروازیں کشمیر کے قریب سے گزرتی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

دبئی ائیر شو 2019 کا آغاز ؛ پاکستان سمیت 160 ممالک کی شرکت

دبئی ائیر شو 2019 کا آغاز ؛ پاکستان سمیت 160 ممالک کی شرکت

دبئی میں سالانہ ائیر شو 2019 کا آغاز ہوگیا ، ائیر شو میں پاکستان سمیت …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے