داعش افغانستان سے لکڑی کاٹ کر پاکستان سمگل کر رہی ہے:وائس آف امریکہ

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک)وائس آف امریکہ نے دعویٰ کیاہے کہ داعش افغانستان میں سے درخت کاٹ کر پاکستان سمگل کر رہی ہے ۔

وائس آف امریکہ کے مطابق افغان حکام اور قبائلی عہدیداروں کا کہناہے کہ روزانہ کی بنیاد پر لکڑی سے بھرے ہوئے ٹرک غیر قانونی طور پر پاکستان بھیجے جاتے ہیں جبکہ لکڑی کی کچھ مقدار مقامی مارکیٹ میں بھی فروخت کی جاتی ہے ۔کنار کے رہائشی محمد رفیق کا کہناہے کہ لکڑی پشاور کے علاوہ کندھار کے راستے کوئٹہ بھی سمگل کی جاتی ہے جبکہ کچھ مقدار میں لکڑی کو کراچی کے راستے دبئی بھی سمگل کیا جاتاہے ۔مقامی رہائشی ملک ہاشم نازیان قبیلے کے عہدیدار نے دعویٰ کیا کہ سمگلنگ پاک افغان بارڈر ڈیورنڈ لائن کے ساتھ علاقوں میں سے کی جاتی ہے ۔
مقامی شہریوں کا کہناہے حکومت نے اس حوالے سے آنکھیں بند کی ہو ئیں ہیں اور کوئی بھی اقدام نہیں کیا جارہاہے جبکہ ایک شہری کا کہناہے کہ کالعدم تنظیم داعش کیلئے کچھ مقامی لوگ سہولت کار کا کام کر رہے ہیں جو کہ لکڑی مقامی مارکیٹ تک پہنچاتے ہیں ۔ننگھار ایگری کلچر ڈائریکٹوریٹ کے ڈائریکٹر نے کہاہے کہ انہوں نے اس بارے میں سنا ہے لیکن درخت کاٹنے کا سلسلہ ابھی صرف ایک ضلع میں ہو رہاہے ۔دیہبالہ واحد ضلع ہے جہاں لکڑی کاٹنے کا سلسلہ تاحال جاری ہے ،ہم اس کو روکنے کیلئے مقامی عہدیداروں سے بات چیت کر رہے ہیں اور جلد ہی اس پر قابو پا لیا جائے گا ۔

یہ بھی پڑھیں

امریکہ اور چین کے تجارتی مذاکرات ناکام

امریکہ اور چین کے تجارتی مذاکرات ناکام

چین کے دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ امریکہ اور چین کے تجارتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے