زائد, قیمتوں پر, دودھ فروخت, کرنے والے ریٹیلرز کے, خلاف کریک ڈاؤن, کا, آغاز

زائد قیمتوں پر دودھ فروخت کرنے والے ریٹیلرز کے خلاف کریک ڈاؤن کا آغاز

کراچی: ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ متعد مرتبہ درخواست کے باوجود حکومت نے قیمتیں بڑھانے سے انکار کردیا تھا، جس نے فارمرز کو ’مجبور‘ کیا کہ وہ خود سے فیصلہ کریں

چارے کی قیمتوں کے ساتھ ایندھن کی قیمتوں میں کئی گناہ اضافہ ہوا، جس نے ٹرانسپورٹ کے اخراجات بڑھا دیے‘
حکومت کی جانب سے قیمتوں کو اس وقت دیکھا گیا جب فارمرز نے اس میں اضافے کا اعلان کیا، شہری انتظامیہ کی جانب سے دعویٰ کیا گیا کہ انہوں نے زائد قیمتوں پر دودھ فروخت کرنے والے ریٹیلرز کے خلاف کریک ڈاؤن کا آغاز کردیا۔
شہری انتظامیہ کی جانب سے دودھ کی فی لیٹر قیمت 94 روپے مقرر کی گئی ہے جبکہ بڑی تعداد میں دودھ فروش اسے 100 سے لے کر 180 روپے تک فروخت کر رہے ہیں۔
دودھ کی زیادہ تر دکانوں نے خود سے دودھ کی قیمت 100 روپے فی لیٹر مقرر کردی جو غیر قانونی ہے۔
شہری انتظامیہ کی ٹیموں نے مختلف دودھ کی دکانوں پر چھاپے مارے اور مقررہ قیمت سے زائد پر دودھ فروخت کرنے والوں پر جرمانے عائد کیے۔

یہ بھی پڑھیں

سندھ بھر میں کتوں کی بھرمار کے باعث شہریوں کی زندگی کو خطرہ لاحق

سندھ بھر میں کتوں کی بھرمار کے باعث شہریوں کی زندگی کو خطرہ لاحق

کراچی: حکومت سندھ ، محکمہ صحت اور بلدیہ عظمی شہریوں کو بہتر علاج کی سہولیات …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے