پولیس افسران, اور ایف آئی اے, صرف کہانیاں, سناتے ہیں

پولیس افسران اور ایف آئی اے صرف کہانیاں سناتے ہیں

کراچی: جسٹس نعمت اللہ پھلپوٹو اور جسٹس کے کے آغا پر مشتمل دو رکنی بینچ کے روبرو 70 سے زائد لاپتا افراد کی بازیابی سے متعلق درخواستوں کی سماعت ہوئی

پولیس اور ایف آئی اے والے کچھ نہیں کرتے، آئی جی سندھ کو بلا کر کہتے ہیں آؤ اور اپنے پولیس افسران کے کارنامے دیکھو، دکھ تو اس بات کا ہے آئی جی سندھ بھی اپنی ڈیوٹی پوری نہیں کرتے، لاپتا افراد کے اہلخانہ پریشان ہیں کسی کو احساس ہی نہیں، 4 سال سے ندیم لاپتا ہے ڈی ایس پی نعیم نے ایف آئی اے کو شناختی کارڈ ہی فراہم نہیں کیا۔
ایف آئی اے والے بھی کچھ نہیں کرتے، عدالت اس سے مایوس ہوچکی ہے۔
پولیس اور ایف آئی اے میں رابطوں کا فقدان لگتا ہے، پولیس افسران اور ایف آئی اے والے صرف کہانیاں سناتے ہیں، ہمیں ہر صورت لاپتا شہری بازیاب کرانے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

نیپرا کی فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی کی ناک کے نیچے شہر کے رہائشی، تجارتی، صنعتی یکساں لوڈ شیڈنگ

نیپرا کی فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی کی ناک کے نیچے شہر کے رہائشی، تجارتی، صنعتی یکساں لوڈ شیڈنگ

کراچی: گورنر سندھ اور وفاقی وزیر اسد عمر نے صنعت کاروں سے بلا تعطل بجلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے