امریکہ روس کےاستحکام کیلئےخطرہ پیداکررہاہے

روس کاکہناہےکہ امریکہ غیردوستانہ اقدامات کےذریعے روس کےاستحکام کےلیےخطرات پیدا کررہاہے۔صدارتی حکم نامےمیں کہاگیاہے کہ روسی فیڈریشن کےتحفظ کےلیےہنگامی اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔

خیال رہے کہ معطل کیے جانے والے معاہدے کے تحت ہر ملک نے 34 ٹن اضافی پلوٹونیم کو ری ایکٹرز میں تلف کرنا تھا۔

امریکہ محکمہ خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دونوں ممالکوں کے پاس موجود مجموعی طور پر 68 ٹن پلوٹونیم سے اندازاً 17 ہزار جوہری بم تیار کیے جا سکتے ہیں۔

یاد رہے کہ رواں سال اپریل میں روسی صدرپیوٹن نےامریکہ پرالزام عائدکیاتھاوہ پلوٹونیم کواس طرح سےتلف کررہاہے کہ جس کی مدد سے دوبارہ پلوٹونیم کوجوہری ہتھیاربنانےکےلیےاستعمال کیاجاسکے۔

دوسری جانب امریکہ نےروس کے ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئےکہا کہ امریکہ کاپلوٹینیم تلفی کاطریقہ کار معاہدے کی خلاف ورزی نہیں ہے۔

واضح رہے کہ روس کی جانب سے حالیہ قدم دونوں ممالک کے درمیان بگڑتے ہوئے تعلقات کی جانب ایک واضح اشارہ ہے

یہ بھی پڑھیں

نسل کشی کو دو سال مکمل ہونے پر بنگلادیش میں مقیم روہنگیا کے مسلمانوں کا احتجاجی مارچ

نسل کشی کو دو سال مکمل ہونے پر بنگلادیش میں مقیم روہنگیا کے مسلمانوں کا احتجاجی مارچ

ڈھاکا: ریلی میں موجود افراد نے روہنگیا کی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ مہاجرین …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے