کرتارپور راہداری؛ مشرقی پنجاب کے وزرا مذاکرات منسوخی پر پھٹ پڑے

کرتارپور راہداری؛ مشرقی پنجاب کے وزرا مذاکرات منسوخی پر پھٹ پڑے

لاہور: 

مشرقی پنجاب کے وزرا کرتارپور راہداری کے سلسلے میں ہونے والے مذاکرات کی منسوخی پر پھٹ پڑے۔

پاکستان نے کرتارپور راہداری پرہونیوالے کام بارے جہاں پوری دنیا میں بسنے والے سکھوں کوآگاہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے وہیں بھارتی پنجاب کے کئی وزیروں نے کرتارپور راہداری پر ہونے والے مذاکرات سے بھاگنے پر حکومت پرسوال اٹھانے شروع کردیے ہیں اورمودی حکومت سے جواب مانگ لیا ہے۔

مشرقی پنجاب کے ایک سینئر وزیرسکھجیندر رندھاوا نے کہا ہے کہ کرتارپور راہداری پرہونے والے مذاکرات سے فرارکی وجہ سے اب انھیں اپنے وزیراعظم نریندرمودی کی نیت پرشک ہو رہا ہے۔

پریس سے فون پربات کرتے ہوئے سکھ جیندررندھاوا نے کہا کہ بھارتی حکومت کا گوپال سنگھ چاولہ کوجوازبناکرمذاکرات سے بھاگنا سمجھ سے بالاترہے۔

امریکا نے بھارت کو 24 آبدوز شکن ہیلی کاپٹروں کی فروخت کی منظوری دے دی

یہ بھی پڑھیں

افغان صدر پر چیف ایگزیکٹیو کا الزام

افغان صدر پر چیف ایگزیکٹیو کا الزام

افغانستان کے چیف ایگزیکٹیوعبداللہ عبداللہ نے صدر اشرف غنی پر انتخابی مہم کے دوران سرکاری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے