پاکستان اور بھارت سندھ طاس معاہدے پر قائم رہیں

بھارتی میڈیا رپورٹس پر خبریں زیر گردش ہیں کہ ہندوستان کشمیر کے معاملے پر پاکستان کو پالیسی بدلنے پر مجبور کرنے کے لئے سندھ طاس معاہدے کو ختم کرنے پر سنجیدگی سے غور کررہا ہے جس پر امریکی وزارت خارجہ کی جانب سے بیان جاری ہوا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان سندھ طاس معاہدہ شراکت داری کا نمونہ ہے دونوں ممالک کو چاہئے کہ وہ اس معاہدے پر سختی سے عمل کریں۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان جان کربی نے کہا ہے کہ سندھ طاس معاہدہ گزشتہ 50 برس سے پاکستان اور بھارت کے درمیان شراکت داری کے نمونے کے طور پر قائم ہے اور امید ہے کہ دونوں ممالک ہاہمی اختلاف کو مذاکرات کے ذریعے حل کرکے معاہدے پر کاربند رہیں گے۔

وضح رہے کہ 18 ستمبرکو کشمیر کے علاقے اڑی سیکٹر میں بھارتی فوجی کیمپ پر حملے کے  بعد بھارت نے پاکستان کے ساتھ انڈس واٹر کمشنرز کے ششماہی مذاکرات معطل کردئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں

امن و استحکام کے بغیر معاشی بہتری حاصل نہیں کی جاسکتی

امن و استحکام کے بغیر معاشی بہتری حاصل نہیں کی جاسکتی

ڈیووس: مجھے سمجھ نہیں آتا کہ ریاستیں مسائل کا حل جنگ میں کیوں ڈھونڈ رہی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے