ایتھوپیا میں بھگدڑ مچنے سے 52افراد ہلاک

ایتھوپیا کے شہر اورومیو میں لوگوں کو منتشر کرنے کے لیے پولیس کی فائرنگ کے باعث بھگدڑ مچنے سے 52 ہلاک جبکہ درجنوں زخمی ہوئے۔

غیر ملکی خبرایجنسی کے مطابق ہزاروں افراد مذہبی تقریب میں شرکت کے لیے دارالحکومت ادیس ابابا سے چالیس کلومیٹر دور علاقے بشوفتو میں جمع ہوئے، رپورٹس کے مطابق تقریب کے دوران جب حکومت مخالف مظاہرین نے پتھراؤ اور بوتلیں پھینکنے شروع کیں تو پولیس نے پر امن مظاہرین پر شیلنگ کی ۔

غیر مصدقہ ذرائع نے تین سو افراد کے ہلاک ہونے کا دعوی کیا ہے۔

ارومو میں حزب اختلاف نے شہریوں کے قتل کے خلاف 5 روزہ احتجاجی مظاہروں کا اعلان کردیا، کارکن جاور محمد کا کہنا ہے کہ اس واقعے میں تقریباً 300 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے ہیں، لوگوں پر فوجیوں نے براہ راست اور گن شپ ہیلی کاپٹر سے فائرنگ کی گئی، جس کے باعث لوگ پہاڑی سے جھیل میں گرے۔

واضح رہے کہ حال ہی میں ایتھوپیا میں خونریز جھڑپوں میں اورومیو اور امہارا کے علاقوں میں لوگوں نے سیاسی اور معاشی استحصال کے خلاف آواز اٹھائی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

سخت مقابلے کے بعد کنزرویٹو پارٹی کی کامیابی کی پیش گوئی

سخت مقابلے کے بعد کنزرویٹو پارٹی کی کامیابی کی پیش گوئی

لندن: ڈیٹا کمپنی یو گو نے انتخابات سے ایک روز قبل جاری کیے گئے پول …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے