پرویز مشرف, کی بیماری, کا معاملہ بھی, نواز شریف کی, طرح ہی ہے

پرویز مشرف کی بیماری کا معاملہ بھی نواز شریف کی طرح ہی ہے

اسلام آباد: پرویز مشرف کی بیماری کا معاملہ بھی نواز شریف کی طرح ہی ہے، ملزم کو ریلیف دینے کی مثال نواز شریف کی صورت میں موجود ہے

سپریم کورٹ آف پاکستان نے سنگین غداری کیس سے متعلق درخواست میں حکم دیا تھا کہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف اگر 2 مئی کو پیش نہیں ہوتے تو خصوصی عدالت استغاثہ کو سن کر فیصلہ کرے۔
پرویز مشرف بظاہر بیمار لگ رہے ہیں، انہیں صحت بہتر ہوتے ہی عدالت کے سامنے پیش ہونا چاہیے۔
عدالت عظمیٰ نے یہ بھی فیصلہ دیا تھا کہ 2 مئی کو پرویز مشرف کے پیش نہ ہونے پر ان کا دفاع کا حق ختم ہوجائے گا اور ان کو دفعہ 342 کے تحت بیان ریکارڈ کروانے کی سہولت بھی نہیں ہوگی۔
سپریم کورٹ کے فیصلے میں کہا گیا تھا کہ اگر پرویز مشرف پیش نہیں ہوتے تو اس کا مطلب ہے کہ 342 کا بیان ریکارڈ کروانے کی سہولت سے فائدہ نہیں اٹھانا چاہتے۔
پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) کے منیجنگ ڈائریکٹر (ایم ڈی) کی تقرری کے حوالے سے ایک سوال پر فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ہم نے سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل درآمد کرنا ہے، اس سلسلے میں 42 درخواستیں آچکی ہیں، جس پر بورڈ بننا ہے اور ایم ڈی کی تقرری کرنی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

فریال تالپور کی سندھ اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کو یقینی بنانے کے انتظامات کیے جائیں

فریال تالپور کی سندھ اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کو یقینی بنانے کے انتظامات کیے جائیں

اسلام آباد: سندھ اسمبلی میں ہونے والے اجلاس میں شرکت کی تاہم بدھ کے روز …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے