شمالی وزیرستان, موبائل, اور ڈیٹا سروس اب تک شروع, نہیں کی, جا, سکیں

شمالی وزیرستان موبائل اور ڈیٹا سروس اب تک شروع نہیں کی جا سکیں ہیں

شمالی وزیرستان: قبائلی علاقوں میں فوجی آپریشنز کے بعد مقامی لوگوں کا ایک بڑا مطالبہ موبائل فون اور 3 جی اور 4 جی سروس کی بحالی ہے۔ تاہم وزیراعظم اور وزیراعلیٰ کے پی کے کے اعلانات کے باوجود ضلع باجوڑ میں موبائل ڈیٹا سروس اور شمالی وزیرستان موبائل اور ڈیٹا سروس اب تک شروع نہیں کی جا سکیں ہیں

موبائل فون کمپنیوں کا کہنا ہے کہ پی ٹی اے اور وزارت داخلہ کے باقاعدہ احکامات کے بغیر یہ سروسز شروع نہیں کی جا سکتیں۔ باجوڑ میں وزیر اعظم عمران خان نے چند روز پہلے ایک عوامی جلسے میں 3 جی اور 4 جی سہولت فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا۔
فوجی آپریشنز سے پہلے ان قبائلی علاقوں میں موبائل فون اور انٹرنیٹ کی سہولت موجود تھی۔ ان علاقوں کو دنیا سے منسلک کرنے کے لیے ان سہولیات کی فراہمی کے وعدے تو کیے جا رہے ہیں لیکن عمل نہیں کیا جا رہا۔
گذشتہ روز چند لمحوں کے لیے ضلع باجوڑ کے علاقے خار میں موبائل فون کی ڈیٹا سروس کچھ دیر کے لیے شروع ہوئی تھی جس سے انھیں خوشی تو ضرور ہوئی لیکن چند کچھ دیر بعد سروس معطل کر دی گئی تھی۔
انھوں نے بتایا کہ آج باجوڑ میں موبائل انٹرنیٹ کی کوئی سروس دستیاب نہیں ہے۔ اسی طرح باجوڑ سے طالب علموں اور تاجروں سے بات چیت ہوئی تو ان کا کہنا تھا کہ ان کے علاقے میں موبائل فون کی 3 جی اور 4 جی کی سروس دستیاب نہیں۔
باجوڑ سے تعلق رکھنے والے ایک شہری محمد شفیق نے بتایا کہ موبائل ڈیٹا اس وقت انتہائی ضروری ہے۔ انھوں نے کہا کہ طلبہ اور تاجروں کو مختلف حوالوں سے موبائل ڈیٹا کی ضرورت ہوتی ہے اور اس کے علاوہ باجوڑ کے بہت لوگ بیرونِ ملک رہتے ہیں، ان سے رابطے کے لیے بھی موبائل ڈیٹا سروس بہت ضروری ہے۔
باجوڑ سے تعلق رکھنے والے مقامی صحافی بہاؤالدین نے کہا کہ موبائل فون سروس باجوڑ میں پہلے سے موجود تھی اور اب 3 جی اور 4 جی کی باتیں ہو رہی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ جو لوگ 3جی اور 4 جی سروس کو سراہتے ہیں وہ ان کی سیاسی مجبوری ہے لیکن بنیادی طور پر قبائل کو روزگار کی ضرورت ہے۔ جن لوگوں کے مکانات تباہ ہوئے ہیں ان کی مرمت کی ضرورت ہے اسی طرح باجوڑ میں بجلی کا مسئلہ انتہائی سنگین ہے۔ حکومت اگر چاہتی ہے تو بجلی کا مسئلہ حال کر دے۔
شمالی وزیرستان میں وزیر اعلی محمود خان کے اعلان کے باوجود نہ تو موبائل فون نا ہی ڈیٹا سروس شروع کی جا سکی ہے۔ شمالی وزیرستان میں نہ تو موبائل فون سروس ہے اور نہ ہی تھری جی اور فور جی سروس دستیاب کی گئی ہے۔
موبائل فون سروس فراہم کرنے والی کمپنی یو فون کے عہدیدار نے کہا ہے کہ باجوڑ میں گذشتہ روز انھوں نے آزمائشی سروس شروع کی تھی لیکن جب تک پی ٹی اے اور وزارت داخلہ کی جانب سے باقاعدہ احکامات جاری نہیں ہوتے وہ یہ سروس شروع نہیں کر سکتے۔
وزیر اعظم عمران خان نے یہ اعلان بھی کیا ہے کہ قبائلی علاقوں میں ہر سال ایک سو ارب روپے ترقیاتی منصوبوں پر خرچ کیے جائیں گے اور اس کے لیے ٹیمیں روانہ کر دی گئی ہیں۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ یہ ایک سو ارب روپے کے فنڈز سے ترقیاتی منصوبے شروع کرنا حکومت کے لیے بڑا چیلنج ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں

لیویز اور, خاصہ داروں ,کو پولیس میں, ضم کرنے کا, نوٹیفیکیشن جاری

لیویز اور خاصہ داروں کو پولیس میں ضم کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری

پشاور: وزیراعلیٰ کے پی محمود خان نے کہا کہ لیویز اور خاصہ داروں کو پولیس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے