تھریسامے کے بل پر دوبارہ ووٹنگ نہیں ہوسکتی، اسپیکر کا بیان

تھریسامے کے بل پر دوبارہ ووٹنگ نہیں ہوسکتی، اسپیکر کا بیان

برطانوی پارلیمنٹ دارالعوام کے اسپیکرنے بریگزٹ سمجھوتے کے بارے میں دوبارہ ووٹنگ کی مخالفت کی اور اسے ملکی قوانین کے منافی قرار دیا ہے۔

برطانوی پارلیمنٹ دارالعوام کے اسپیکر John Bercow نے کہا ہے کہ یورپی یونین سے برطانیہ کے نکلنے کے طریقہ کار کے بارے میں وزیراعظم تھریسا مے کی حکومت کے سابقہ بل کے لئے پارلیمنٹ میں دوبارہ ووٹنگ نہیں ہوسکتی کیونکہ اس بل کی پہلے ہی دومرتبہ پارلیمنٹ میں مخالفت ہوچکی ہے اور ایوان اس کو مسترد کرچکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئین اس بات کی اجازت نہیں دیتا کہ حکومت کے سابقہ بل پر بار بار ووٹنگ کرائی جائے۔

یہ بیان ایک ایسے وقت سامنے آیا ہے جب تھریسامے پارلیمنٹ میں دوبار سنگین شکست کھانے کے بعد یورپی یونین کے رکن ملکوں کے سربراہی اجلاس سے قبل ایک بار پھر بل کو پارلیمنٹ میں پیش کرنا چاہتی ہیں۔

برطانوی وزیراعظم اس سلسلے میں سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں سے ملاقات کرکے بل کے حق میں حمایت حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہیں

قازقستان کے صدر تین دہائیوں کی بلاشرکت غیرے حکمرانی کے بعد اچانک مستعفی

یہ بھی پڑھیں

سوڈان میں سیاسی ومعاشی بحران، سعودی عرب اور یو اے ای کا امداد کا اعلان

سوڈان میں سیاسی ومعاشی بحران، سعودی عرب اور یو اے ای کا امداد کا اعلان

ریاض: سوڈان میں جاری سیاسی ومعاشی بحران کے پیش نظر سعودی عرب اور متحدہ عرب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے