مشال قتل کیس, کا, محفوظ فیصلہ, موخر, کردیا اب یہ, فیصلہ 21 مارچ, کو سنایا, جائے گا

مشال قتل کیس کا محفوظ فیصلہ موخر کردیا اب یہ فیصلہ 21 مارچ کو سنایا جائے گا

پشاور: دوران سماعت مشال خان قتل کیس میں نامزد 4 ملزمان کو پشاور کی انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا گیا۔
اس موقع پر عدالت میں اور اس کے اطراف میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے

12 مارچ کو پشاور کی انسداد دہشت گردی عدالت نے مشال قتل کیس کے آخری 4 ملزمان کا فیصلہ محفوظ کیا تھا جسے 16 مارچ کو سنایا جانا تھا۔
13 اپریل 2017 کو عبد الولی خان یونیورسٹی مردان کے 23 سالہ طالب علم مشال خان پر توہین مذہب کا الزام لگا کر انہیں قتل کردیا گیا تھا۔
ستمبر 2018 کو انسداد دہشت گردی عدالت نے کیس میں ملوث چاروں ملزمان پر فرد جرم عائد کی تھی۔
ملزمان اسد کٹلنگ، صابر مایر، عارف خان مردانوی اور اظہار اللہ عرف جوہنی واقعے کے بعد فرار تھے جنہیں گرفتار کرکے ان کے خلاف ٹرائل چلانے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔
آج سماعت کے دوران عدالت میں دونوں فریقین کے وکلاء نے اپنے دلائل مکمل کرلئے جس کے بعد کیس کا فیصلہ محفوظ کیا گیا۔
مشال خان قتل کیس کے مرکزی ملزم کو 8 مارچ کو پولیس نے مردان کے علاقے چمتار سے گرفتار کیا تھا۔
انسداد دہشتگردی عدالت کیس میں 46 گواہان اور مشال کے والد کا بیان پہلے ہی کارڈ کرچکی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

گریڈ 7 یا, زیادہ کے, سرکاری ملازمین پر,انکم ٹیکس عائد, کردیا

گریڈ 7 یا زیادہ کے سرکاری ملازمین پرانکم ٹیکس عائد کردیا

پختونخوا: حکومت نے20ہزار سے زائد آمدنی کے حامل عام شہریوں اور گریڈ 7 یا زیادہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے