لاہور: دو گروپوں میں فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے دو طالبعلم بھائیوں کے لواحقین کا قرطبہ چوک میں دھرنا

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور میں دو گروپوں میں دشمنی پر فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے دو طالب علم بھائیوں کے لواحقین نے مزنگ چونگی چوک میں احتجاجی مظاہرہ کیا اور کئی گھنٹے وہاں دھرنا دیا جس سے وہاں ٹریفک کا نظام بری طرح متاثر ہوا۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق سمن آباد میں آزاد چیئرمین چودھری سلیم اور ن لیگ کے امیدوار وائس چیئرمین حنان چودھری کے چچا اور سابق طالب علم رہنما ساجد چو دھری میں دشمنی چلی آرہی ہے جو بلدیاتی الیکشن میں ن لیگ کے پینل کے ہارنے کے بعد شدت اختیار کر گئی۔ اسی رنجش کی بنا پر چند دن پہلے ساجد چودھری، اس کے بھائی سومی نے اپنے ساتھیوں سمیت فائرنگ کی تھی جس کی زد میں آکر چھت پر کھڑے دو طالب علم بھائی صفدر اور بہادر آگئے تھے ۔ دونوں بھائیوں کے قتل کا مقدمہ ساجد چودھری اس کے بھتیجے سومی اور دیگر افراد پر ہوا تھا۔دھرنے کی اطلاع ملنے پر ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف اور دیگر اعلیٰ حکام موقع پر پہنچ گئے اور مذاکرات کئے ۔مذاکرات کے بعد انصاف کی ضمانت پرمظاہرین پرامن طور پر منتشر ہوگئے۔

یہ بھی پڑھیں

اپوزیشن اپنا تعمیری کردار ادا نہیں کر رہی

اپوزیشن اپنا تعمیری کردار ادا نہیں کر رہی

لاہور: راجہ بشارت نے کہا کہ پروڈکشن آرڈر جاری کرنا اسپیکر کا اختیار ہے جن …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے