مہمند ڈیم منصوبے, کے تعمیری, ٹھیکے کی, نیلامی

مہمند ڈیم منصوبے کے تعمیری ٹھیکے کی نیلامی

لاہور: واپڈا نے منصوبے کے حکام کو قواعد کے مطابق منظوری کا مسودہ بھی جاری کرنے کی ہدایت کی جس میں معاہدے پر دستخط ہونے کے اگلے ماہ سے کانٹریکٹر سے کام کا آغاز کرنے کا کہا جائے گا

چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل (ر) مزمل حسین نے کہا کہا ’اتنے بڑے ہائیڈرو پاور منصوبے کے لیے پچھلے 50 سالوں میں کوئی کانٹریکٹ نہیں دیا گیا لیکن اللہ کا شکر ہے کہ بالآخر اس کی تعمیر کا ٹھیکہ سی جی جی سی اور ڈیسکون کے اشتراک کو دے دیا گیا‘
انہوں نے دعویٰ کیا کہ دونوں کمپنیوں کے اشتراک (جے وی) سے منصوبے کی لاگت کم کرنے کا کہا گیا تھا جس پر انہوں نے کل لاگت میں سے 18 ارب روپے کم کیے ہیں۔
واپڈا کے مطابق جے وی کی جانب سے منصوبے کے سولِ، الیکٹرکل اور مکینکل کاموں کے لیے 201 ارب روپے کی بولی دی گئی تھی تاہم گفتگو شنید کے بعد انہوں نے اس لاگت میں 18 ارب روپے کی کمی کر کے اسے 183 ار روپے تک کردیا۔
چیئرمین واپڈا کے مطابق ’زمین کے مالکان زمین دینے کے لیے تیار ہوگئے ہیں جس کے بعد اب منصوبے پر کسی وقت بھی کام شروع کیا جاسکتا ہے‘۔
واپڈا کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق مذکورہ ٹھیکہ واپڈا ہاؤس میں ایک اجلاس کے دوران دیا گیا جس میں تکنیکی اور دیگر پہلوؤں کو مدِ نظر رکھتے ہوئے تمام تر تفصیلات کے حوالے سے بات چیت کی گئی تھی۔
منصوبے کے پی سی-1 کی رو سے اس کی تعمیر 5 سال 8 مہینے میں مکمل ہونی ہے تاہم واپڈا نے درخواست کی ہے کہ اسے 5 سال سے کم مدت میں مکمل کرلیا جائے۔
چیئرمین واپڈا کا کہنا تھا کہ آپریشن اور منصوبے کی دیکھ بھال و مرمت صرف واپڈا کی ذمہ داری ہوگی اور ہم او اینڈ ایم ورک کسی کو نہیں دیں کیوں کہ یہ قومی ملکیت ہے چنانچہ واپڈا خود اس کی ذمہ داری اٹھائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

کٹھ پتلیوں کو سیاست سے فارغ کرنا ہے

کٹھ پتلیوں کو سیاست سے فارغ کرنا ہے

رحیم یار خان:  ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے