سعودی وزیرِ خارجہ نے کشمیر کے سوال پر بھارتی صحافی کا منہ بند کرا دیا

سعودی وزیرِ خارجہ نے کشمیر کے سوال پر بھارتی صحافی کا منہ بند کرا دیا

نئی دہلی: سفارتی محاذ پر بھارت کو ایک اور دھچکا پہنچا ہے، سعودی وزیرِ خارجہ نے کشمیر کے سوال پر بھارتی صحافی کا منہ بند کرا دیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ٹی وی کو انٹرویو کے دوران کشمیر پر سوال آیا تو سعودی وزیرِ خارجہ عادل الجُبیر کے جواب نے بھارتی صحافی کو خفت میں مبتلا کر دیا۔

بھارتی صحافی نے سعودی وزیر خارجہ سے سوال کیا کہ کیا آپ کشمیر کو پاکستان کی نظر سے دیکھتے ہیں۔

سعودی وزیر خارجہ نے جواب دیا کہ ہم مسئلہ کشمیر کو کسی کی نظر سے نہیں دیکھتے، اس معاملے پر اقوامِ متحدہ کی قراردادیں موجود ہیں، مسئلہ کشمیر یو این قرارداد کے مطابق حل ہونا چاہیے۔

عادل الجبیر نے کہا کہ متنازعہ وادی کا حل کشمیریوں کی خواہش کے مطابق ہونا چاہیے، تاہم انھوں نے یہ بھی کہا کہ مسئلہ کشمیر کا حل پاک بھارت مفاد کو مدِ نظر رکھ کر ہونا چاہیے۔

دریں اثنا حریت پسند کشمیری رہنما میر واعظ عمر فاروق نے سعودی وزیرِ خارجہ کے مقبوضہ کشمیر پر بیان کا خیر مقدم کیا۔

یاد رہے کہ دو روز قبل نئی دہلی میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے بھی پاکستان کے دہشت گردی میں ملوث ہونے کی بھارتی خواہش کو یکسر مسترد کر دیا تھا، وزیر خارجہ عادل الجبیر کا کہنا تھا کہ بھارت نے بغیر تحقیق کے پاکستان پر الزام عائد کیا۔

بھارتی میڈیا نے سعودی ولی عہد کی جانب سے پاکستان مخالف بات نہ کرنے پر مایوسی کا اظہار کیا جب کہ سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے بھارتی میڈیا کو آئینہ دکھا دیا۔

اسرائیل عالمی قوانین کی خلاف ورزی کر رہا ہے، محمد جواد ظریف

یہ بھی پڑھیں

ریاست جارجیا کے حراستی مراکز میں قید خواتین کے ’رحم مادر‘ نکالے جانے کا اسکینڈل

ریاست جارجیا کے حراستی مراکز میں قید خواتین کے ’رحم مادر‘ نکالے جانے کا اسکینڈل

امریکا: اسکینڈل اس وقت سامنے آیا جب ریاست جارجیا کی ارون کاؤنٹی کے ایک حراستی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے