بھارت نے کسی, بھی جارحیت, دکھائی تو افغان امن, عمل متاثر, ہو سکتا ہے

بھارت نے کسی بھی جارحیت دکھائی تو افغان امن عمل متاثر ہو سکتا ہے

کابل: افغانستان میں پاکستانی سفیر زاہد نصراللہ سے ملاقات کے بعد وزارت خارجہ سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ہمیں ان کا بیان افغانستان میں امن کی پاکستان کے وعدوں کے خلاف لگا

پاکستانی سفیر نے منگل کو اپنے بیان میں کہا تھا کہ بھارت کی جانب سے پاکستان پر کسی بھی قسم کا حملہ خطے کے استحکام کو متاثر کرے گا اور اس کے افغان امن عمل کے تسلسل پر اثرات مرتب ہوں گے۔
اس بیان پر افغانستان کے سابق نائب وزیر دفاع نے کہا تھا کہ نصراللہ کے بیان سے مقامی حکومتی آفیشلز ناراض ہوں گے کیونکہ اس سے یہ خطرات پیدا ہوں گے کہ ملک میں جاری جنگ خطے کی حریف طاقتوں کی پراکسی ہے۔
افغان وزارت کارجہ کے بیان میں پاکستان سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ افغانستان کے حوالے سے اپنے وعدوں خصوصاً امن کے حوالے سے اپنے وعدوں کو پورا کرے اور ایسے غیرمتعلقہ بیان دینے سے گریز کیا جائے جن سے مسائل کے حل میں کوئی مدد نہ مل سکتی ہو۔

یہ بھی پڑھیں

لندن کے گریٹ آرمنڈ اسپتال میں کامیاب آپریشن

لندن کے گریٹ آرمنڈ اسپتال میں کامیاب آپریشن

لندن: اس آپریشن کی سیریز میں مجموعی طور پر 55 گھنٹے کا دورانیہ صرف ہوا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے