ضلع ملیر, پولیس کی, کارروائی

ضلع ملیر پولیس کی کارروائی

کراچی: ڈی آئی جی ایسٹ عامر فاروقی نے اپنے دفتر میں پریس کانفرنس میں میڈیا کو بتایا کہ ضلع ملیر پولیس اور وفاقی انٹیلی جنس اداروں نے مشترکہ کارروائی

گڈاپ کے علاقے میں چھاپہ مارکر دونوں دہشت گردوں فرقان عرف عبداللہ اور علی اکبر عرف حاجی کو گرفتار کرکے 2 نائن ایم ایم پسٹل ، 2 ہینڈ گرینیڈ اور گولیاں برآمد کرلیں۔ دہشت گرد فرقان کا کالعدم لشکر جھنگوی کے عسکری ونگ کا کمانڈر تھااور دہشت گردی کی متعدد وارداتوں میں پولیس کو ملوث ہے۔
ڈی آئی جی ایسٹ نے مزید بتایا کہ ملزم نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ 16 فروری 2017 کو اس نے سیہون شریف میں درگاہ لال شہباز قلندر ؒ کے مزار پر خودکش حملہ کرایا تھا جس میں 82 زائرین جاں بحق اور 383 زخمی ہوئے تھے۔
ملزم نے بتایا کہ مزار پر حملے کیلیے مفتی ہدایت اللہ ، ڈاکٹر مصطفیٰ ، نعمان اور مقبول نے حملے کے منصوبہ بندی کی تھی۔ میں نے مزار کی ریکی کرنے کے بعد محمد عثمان نامی نوجوان کو خودکش دھماکے کے لیے تیار کیا اور اسے مزار کے قریب لے جاکر چھوڑا ۔

یہ بھی پڑھیں

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 100 ارب کی کرپشن بے نقاب ہوگئی

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 100 ارب کی کرپشن بے نقاب ہوگئی

کراچی: سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 100 ارب کی کرپشن بے نقاب ہوگئی، سندھ لوکل …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے