ملکہ برطانیہ نے بیٹے کے بجائے پوتے کو بادشاہ نامزد کر دیا

ملکہ برطانیہ نے بیٹے کے بجائے پوتے کو بادشاہ نامزد کر دیا

ملکہ برطانیہ نے اپنے بیٹے شہزادہ چارلس کے بجائے پوتے شہزادہ ولیم کو بادشاہ نامزد کر دیا۔

برطانوی میڈیا رپورٹ کے مطابق ڈیمینشیا کے مرض میں مبتلا ملکہ ایلزبتھ بطور ملکہ مزید خدمات سر انجام دینا نہیں چاہتیں۔

رپورٹ کے مطابق ملکہ ایلزبتھ نے برطانوی روایات کے برعکس اپنے بیٹے شہزادہ چارلس کے بجائے اپنے پوتے شہزادہ ولیم کو بادشاہ نامزد کر دیا ہے۔

شہزادہ ولیم کے بادشاہ بننے کے بعد ان کی اہلیہ کیٹ مڈلٹن برطانیہ کی نئی ملکہ بن جائیں گی۔

برطانوی میڈیا کے مطابق ملکہ ایلزبتھ سمجھتی ہیں کہ شہزادہ چارلس میں بادشاہت کرنے کی اہلیت نہیں ہے جب کہ شہزادہ ولیم میں بادشاہت کرنے کا نظم اور طاقت موجود ہے اور لوگ بھی انہیں پسند کرتے ہیں اور ان کا بھی یہی خیال ہے کہ شہزادہ ولیم اپنے والد سے زیادہ اس کے حقدار ہیں۔

برطانوی میگزین میں یہ انکشاف بھی کیا گیا ہے کہ ملکہ ایلزبتھ نے شاہی محل میں ہونے والی ایک خفیہ تقریب میں بادشاہت کا تاج شہزادہ ولیم کو پہنایا۔

آن لائن میگزین رپورٹ میں بھی کہا گیا ہے کہ ملکہ ایلزبتھ نے شہزادہ چارلس کو برطانیہ سے باہر منتقل ہونے کا حکم بھی دیا ہے اور اس خبر سے شہزادہ چارلس کو شدید دھچکہ لگا ہے۔

لگتا ہے کہ میک کیب اور روزینٹین کوئی انتہائی غیر قانونی کام کررہے تھے

یہ بھی پڑھیں

فقط تہران حکومت ہی کے لیے تنبیہ نہیں بلکہ خطے میں امریکی اتحادی ممالک کے لیے یقین دہانی بھی ہے

فقط تہران حکومت ہی کے لیے تنبیہ نہیں بلکہ خطے میں امریکی اتحادی ممالک کے لیے یقین دہانی بھی ہے

واشنگٹن: امریکی قومی سلامتی کے مشیر کا کہنا تھا کہ امریکا کی جانب سے تحمل …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے