دہشت گردی, جہاں ہو تکلیف ,دہ ہوتی ہے

دہشت گردی جہاں ہو تکلیف دہ ہوتی ہے

اسلام آباد: سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان کا اجلاس ہوا، جس میں سینیٹر رحمٰن ملک نے کہا کہ پلوامہ حملہ قابل مزمت ہے، دہشت گردی جہاں ہو تکلیف دہ ہوتی ہے

14 فروری کو مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں حملے میں 44 بھارتی فوجی ہلاک ہوئے تھے، جس کے بعد بھارت کے بغیر کسی ثبوت کے پاکستان پر الزام تراشی شروع کردی تھی اور دونوں ممالک کے درمیان صورتحال کشیدہ ہوگئی۔
سینیٹر رحمٰن ملک کا کہنا تھا کہ بھارتی حکومت کا پلوامہ حملے کے لیے پاکستان کو مورد الزام ٹہرانا قابل مزمت ہے، انہوں نے الزام لگایا کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی پلوامہ جیسے واقعات الیکشن میں اپنی کامیابی کے لیے کر رہے ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ بھارتی وزیراعظم پلوامہ جیسے واقعات کرکے الیکشن میں پاکستان مخالف کارڈ استعمال کرنا چاہتے ہیں
ایوان بالا کے رکن کا کہنا تھا کہ بھارت میں آر ایس ایس، را اور دہشت گرد تنظیموں کا پاکستان کے خلاف گٹھ جوڑ موجود ہے جبکہ پلوامہ حملے کے ساتھ ساتھ نریندر مودی آنے والے دنوں میں سرجیکل اسٹرایکس کا ڈرامہ بھی رچا سکتے ہیں۔
سینیٹر رحمٰن ملک کا کہنا تھا کہ مجھے ٹوئٹر پر ‘را’ کی جانب سے قتل کی دھمکیاں مل رہی ہیں۔
سینیٹر رحمٰن ملک نے پاکستان کو پلوامہ حملے کے لیے مورد الزام ٹھہرانے پر بھارتی حکومت کے خلاف مزمتی قرارداد پیش کی، جسے کمیٹی اراکین نے منظور کرلیا۔

یہ بھی پڑھیں

بجلی چوری, پر, قابو پانے سے, اٹھاون ارب روپے, حاصل ہوئے

بجلی چوری پر قابو پانے سے اٹھاون ارب روپے حاصل ہوئے

اسلام آباد: بجلی کے بلوں کی وصولی میں اکیاسی ارب روپے کے اضافہ پر وزیراعظم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے