پاکستان, ٹیلی کمیونکیشن, اتھارٹی (پی ٹی اے) کو, نوٹس, جاری

پاکستان ٹیلی کمیونکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کو نوٹس جاری

اسلام آباد: چیف جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست کو مستقبل سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئے دلائل کے لیے نوٹس جاری کیا اور پی ٹی اے کو کہا ہے کہ وہ آئندہ سماعت پر اپنا جواب جمع کروائے

اے ڈبلیو پی کی ویب سائٹ کو انتخابات 2018 سے کچھ عرصے قبل بلاک کردیا گیا تھا، پارٹی کی جانب سے الیکشن کمیشن پاکستان (ای سی پی) اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کو شکایت کی گئی تھی لیکن ملک بھر میں زیادہ تر انٹرنیٹ سروس پرووائڈر (آئی ایس پی) کی جانب سے ویب سائٹ بلاک ہے۔
اس سلسلے میں اے ڈبلیو پی کے جنرل سیکریٹری اختر حسین نے اپنے وکیل محمد حیدر امتیاز اور عمر اعجاز گیلانی کے توسط سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کروائی، جس میں پی ٹی اے کو فریق بنایا گیا۔
ساتھ ہی جماعت نے اپنی ویب سائٹ کی بحالی کی درخواست کرتے ہوئے عدالت سے استدعا کہ کہ وہ پی ٹی اے کو ہدایت کرے کہ وہ شہریوں کے آن لائن بنیادی حقوق کا تحفظ کرے اور قانون کے مطابق ممنوع آن لائن مواد کو بند کرنے میں اپنے اختیارات کا استعمال کرے۔
اس ویب سائٹ کو جون 2018 میں بلاک کردیا گیا تھا اور پارٹی نے دعویٰ کیا تھا کہ ان کی انتخابی مہم کو سبوتاژ کرنے کے لیے بلاک کیا گیا۔
درخواست میں ڈیجیٹل رائٹس فاؤنڈیشن اور آن لائن نیٹ ورک انٹرفیرنس کے مبصرین کی رپورٹس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ویب سائٹ کی بندش اختلاف رائے کے خلاف سینسرشپ کا نتیجہ ہے۔
عدالت میں دائر درخواست کے مطابق پارٹی نے پی ٹی اے، ای سی پی اور متعلقہ آئی ایس پیز سمیت مختلف فورمزسے رابطہ کیا لیکن کہی سے بھی کوئی فائدہ حاصل نہیں ہوا۔
اے ڈبلیو پی کا کہنا تھا کہ انہوں نے یہ درخواست آخری امید کے طور پر دائر کی ہے کیونکہ ابھی تک ان کی ویب سائٹ تک رسائی ناممکن ہے۔
یہ درخواست ٹیلی کمیونکیشن نیٹ ورکس کی بندش کے خلاف اسلام آباد ہائی کورٹ کے 2018 کے فیصلے پر انحصار کرتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان، افغانستان میں ہونے والے حالیہ دہشت گردی بے بنیاد الزامات مسترد

پاکستان، افغانستان میں ہونے والے حالیہ دہشت گردی بے بنیاد الزامات مسترد

اسلام آباد: این ڈی ایس کی جانب سے ایک بیان میں دعویٰ کیا گیا تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے