ایران کے لیے جاسوسی، سابق امریکی فوجی افسرپرغداری کا مقدمہ درج کردیا

ایران کے لیے جاسوسی، سابق امریکی فوجی افسرپرغداری کا مقدمہ درج کردیا

واشنگٹن : امریکی حکام نے اپنی ہی فضائیہ کی سابق افسر کو ملک سے غداری اور ایران کے لیے جاسوسی کرنے کے الزام میں گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی پراسیکیوٹر نے یو ایس ایئر فورس کی سابق افسر پر اپنے روایتی حریف ایران کو اپنے انٹیلی جنس افسران کی معلومات فراہم کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

امریکی محکمہ انصاف کی جانب سے 39 سالہ مونیکا ویٹ پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ انہوں نے امریکی خفیہ اداروں کے افسران پر ہونے والے سائبر حملوں میں پاسداران انقلاب کی معاونت کی ہے۔

پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ مونیکا ویٹ نے نظریات کی بنیاد پر اپنے ملک کے خلاف غداری کی تھی اور ایران کو خفیہ معلومات فراہم کیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق فضائی کی سابق افسر کا سنہ 2013 میں ایران کے ساتھ رابطہ ہوا تھا جہاں مونیکا نے اپنے ساتھیوں کی معلومات پاسداران انقلاب کو فراہم کیں جس کے بعد امریکی خفیہ اداروں کے افسران پر سائبر حملے ہوئے۔

خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ امریکی محکمہ انصاف نے مونیکا ویٹ پر خفیہ اداروں کے افسران کے نام، مختلف آپریشنز کی معلومات اور امریکی حکومت کے راز ایران کو فراہم کیے تھے۔

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ ’ہمارے لیے بہت افسوس کی بات ہے کہ ہمارے ملک کی ایک سابق افسر اپنے ہی ملک سے غداری کررہی ہے‘۔

امریکی سیکیورٹی ادارے ایف بی آئی نے ٹویٹر پر ایرانی سپاہ پاسداران انقلاب کے لیے خفیہ اداروں کے افسران کے کمپیوٹر میں داخل ہونے اور ڈیٹا چوری کرنے کے الزام میں چار ایرانی شہریوں کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ ایف بی آئی نے ٹویٹر پر مونیکا ویٹ کےلے اشتہار شائع کیا ہے کہ ’جاسوسی اور دیگر جرائم میں ملوث مونیکا ایلفراڈو ویٹ جہاں بھی نظر آئے فوری طور پر ایف بی آئی یا قریبی امریکی سفارت خانے سے رابطہ کریں‘۔

یمن: الحدیدہ میں سعودی اتحاد کی خلاف ورزی جاری ہے، یمنی فوج کا اعلان

یہ بھی پڑھیں

برطانوی تیل بردار جہاز کو عالمی قوانین کی خلاف کرنے کے الزام میں قبضے میں لے لیا

برطانوی تیل بردار جہاز کو عالمی قوانین کی خلاف کرنے کے الزام میں قبضے میں لے لیا

تہران: ایرانی رضاکار فورس بیسج (سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی) کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے