وینیزوئیلا امریکی فوجیوں کے لئے دوسرا ویتنام ثابت ہو گا، مادورو

وینیزوئیلا امریکی فوجیوں کے لئے دوسرا ویتنام ثابت ہو گا، مادورو

وینیزویلا کے صدر نکولس مادورو نے ایک بار پھر کہا ہے کہ اگر امریکہ نے فوجی آپشن کا استعمال کیا تو وینیزویلا امریکیوں کے لئے دوسرا ویتنام بن جائے گا۔

المیادین ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے وینیزویلا کے صدر کا کہنا تھا کہ امریکہ نے ذرہ برابر بھی کوئی غلطی کی تو حقیقی عالمی برادری امریکی امپریالیزم کے خلاف اٹھ کھڑی ہو گی۔
انہوں نے کہا کہ ہمارے عرب اور مسلمان بھائی اور پوری دنیا کی اقوام، امریکہ کے خلاف جنگ میں وینیزویلا کا ساتھ دیں گی۔
صدر نکولس مادورو نے کہا کہ اس ملک میں جو ہونا ہے اس کا فیصلہ کوئی اور نہیں وینیزویلا کےعوام ہی کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ امریکہ کی حمایت سے متوازی حکومت کے قیام کی کوشش ناکام ہو چکی ہے اور تمام سروے نتائج اس بات کے گواہ ہیں جبکہ اس ملک کے عوام اپنی منتخب کردہ حکومت کو جائز اور قانونی سمجھتے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ وینیزویلا میں نئے بحران کا آغاز تئیس جنوری کو اس وقت ہوا تھا جب صدر مادورو کے مخالف رہنما خوان گوآئیدو نے، امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی کھلی حمایت کے بعد اپنی خود ساختہ صدارت کا اعلان کر دیا تھا۔

مریکی انتباہ نظرانداز، ترکی وینزویلا کے ساتھ

یہ بھی پڑھیں

لندن کے گریٹ آرمنڈ اسپتال میں کامیاب آپریشن

لندن کے گریٹ آرمنڈ اسپتال میں کامیاب آپریشن

لندن: اس آپریشن کی سیریز میں مجموعی طور پر 55 گھنٹے کا دورانیہ صرف ہوا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے