پاکستان یمن جنگ کا حصہ نہیں بنے گا

 اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کی کاوشوں سے سعودی عرب پاکستان تعلقات نئے دور میں داخل ہو رہے ہیں

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان کا بااعتماد اور قریبی دوست ہے، حکومت میں آئے، تو سعودی عرب سے تعلقات سردمہری کا شکار تھے

وزیرخارجہ نے کہا کہ سعوی عرب نے مشکل وقت میں ہمیشہ پاکستان کی کھل کر امداد کی ، سعودی عرب نے  پاکستان کو 3 ارب ڈالر کی خطیر رقم دی، وزیر خارجہ نے کہا کہ سعودی ولی عہد ہفتہ سولہ فروری کو پاکستان آئیں گے، پندرہ سے بیس ارب کے معاہدے متوقع ہیں، سعودی عرب 3سال کے لئےمؤخر ادائیگیوں کے لئے تیل فراہم کررہا ہے، سعودی عرب کے ساتھ ایم اویوز پرعمل درآمد کے لئے نیا مکینزم بنا رہے ہیں

انھوں نے کہا کہ یہاں اچھی چیز  ہو، تو اس پربھی شک کیاجاتا ہے کہیں سازش تو نہیں ، واضح کرتا ہوں کہ  کوئی سازش نہیں ہورہی، پاکستان یمن جنگ کا حصہ نہیں بنے گا۔

، دنیا کےتمام ممالک تین اسپیشل اکنامک زونز کا حصہ بن سکتے ہیں، گوادر کو دنیا کےلئے اقتصادی راہداری کا حب بنانا چاہتے ہیں، معاشی واقتصادی بحالی خارجہ پالیسی کی اولین ترجیح ہے۔

یہ بھی پڑھیں

اسٹیٹ بینک نے پاکستان میں غذائی قلت کے مسئلے پر خصوصہ روشنی ڈالی

اسٹیٹ بینک نے پاکستان میں غذائی قلت کے مسئلے پر خصوصہ روشنی ڈالی

اسلام آباد: بلوچستان میں تقریباً 30 فیصد گھرانے فاقے پر مجبور ہیں جبکہ دوسری جانب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے