آشیانہ, اقبال ہاؤسنگ, اسکینڈل میں دیگر ملزمان کو, اشتہاری, قرار

آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکینڈل میں دیگر ملزمان کو اشتہاری قرار

لاہور: احتساب عدالت کے جج نجم الحسن نے قومی احتساب ادارے (نیب) کی درخواست پر 3 مشتبہ ملزمان کو 10 جنوری کو ’مفرور‘ قرار دیا تھا اور نیب کو ہدایت کی تھی تینوں ملزمان کے اخبارات میں وارنٹ شائع کرنے کے بعد 11 فروری کو رپورٹ پیش کرے

نیب استغاثہ وارث علی جنجوعہ نے عدالت سے درخواست کی تھی کہ کرمنل پروسیجر کوڈ کی دفعہ 87 اور 88 کے تحت کارروائی کا آغاز کیا جائے تاکہ کامران کیانی اور دیگر کو ’مفرور‘ قرار دیا جاسکے۔
نیب رپورٹ میں کہا گیا کہ ملزمان کے وارنٹ پیش نہیں کیے جاسکے ہیں کیونکہ ان کے گھروں پر تالا لگا ہے۔
عدالت نے نیب کی درخواست اور رپورٹ پر تینوں ملزمان کو ’اشتہاری‘ قرار دے دیا۔
عدالت نے قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو کیس میں 18 فروری کو طلب بھی کرلیا ہے۔
سماعت کے دوران نیب کی جانب سے تین ملزمان، وزیر اعظم کے سابق پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد، لاہور ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے سابق ڈائریکٹر جنرل احد خان چیمہ اور بسم اللہ انجینیئرنگ کے شاہد شفیق کو عدالت میں پیش کیا گیا۔
نیب نے اپنے ریفرنس میں شہباز شریف پر وزیر اعلیٰ پنجاب کی حیثیت سے اختیارات کا ناجائز استعمال کا الزام لگایا ہے۔
ان کا کہنا ہے کہ پنجاب لینڈ ڈیولپمنٹ کمپنی (پی ایل ڈی سی) نے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی منظوری کے بغیر آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم کے انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ کا کنٹریکٹ 2013 میں ایم/ایس چوہدری عبدالطیف اینڈ سنز کو دیا تھا۔
کونپرو سروسز پرائیوٹ لمیٹڈ نامی کمپنی جس نے معاملے کی شکایت کی تھی نے فواد الحسن فواد کو رشوت دی۔
نیب نے الزام لگایا کہ شکایت گزار کمپنی کامران کیانی کی ملکیت میں ہے۔
ریفرنس میں کہا گیا کہ سابق وزیر اعلٰی نے قانونی اختیار کے بغیر پی ایل ڈی سی کو رہائشی منصوبہ ایل ڈی اے کے سپرد کرنے کا حکم دیا اور اس وقت احد چیمہ ایل ڈی اے کے ڈائریکٹر جنرل کی حیثیت سے سربراہی کر رہے تھے۔
ان کا کہنا تھا کہ ایل ڈی اے نے پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ کے تحت یہ منصوبے کا آغاز کیا تاکہ بسم اللہ انجینیئرنگ کو غیر قانونی فائدہ پہنچایا جاسکے۔
نیب کا یہ بھی کہنا تھا کہ بسم اللہ انجینیئرنگ سروسز پیراگون سٹی پرائیوٹ لمیٹڈ کی ذیلی کمپنی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

اپوزیشن اپنا تعمیری کردار ادا نہیں کر رہی

اپوزیشن اپنا تعمیری کردار ادا نہیں کر رہی

لاہور: راجہ بشارت نے کہا کہ پروڈکشن آرڈر جاری کرنا اسپیکر کا اختیار ہے جن …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے