گیس کی, فراہمی, جلد بہتر, ہوجائے گی

گیس کی فراہمی جلد بہتر ہوجائے گی

کراچی: گیس کا بحران صرف کراچی تک محدود نہیں بلکہ طلب میں اضافے اور رسد میں کمی کے باعث یہ اسلام آباد سمیت ملک بھر میں پھیلا ہوا ہے

سوال کے جواب میں وفاقی وزیر نے بتایا کہ حکومت بہت جلد کراچی سمیت سندھ کے دیگر علاقوں کے لیے ایک بڑے ترقیاتی پیکیج کا اعلان کرے گی۔
شہر میں سوئی سدرن گیس کمپنی (ایس ایس جی سی) کے متعدد صارفین کی جانب سے موسمِ سرما کے آغاز کے ساتھ ہی گیس پریشر میں کمی یا گیس فراہم نہ کیے جانے کی شکایات کا سلسلہ جاری تھا جو گزشتہ کچھ دنوں سے سنگین ہوگیا ہے۔
ایسے علاقے جہاں کبھی گیس کا مسئلہ درپیش نہیں ہوا وہاں بھی قدرتی گیس کی لوڈ شیڈنگ کا سامنا کیا جارہا ہے۔
ایس ایس جی ترجمان کے مطابق معمول سے کم گیس میسر ہونے کے وجہ سے کمپنی کے گیس سسٹم میں پریشر میں کمی کا سامنا ہے تاہم صورتحال جلد بہتر ہوجائے گی کیوں کہ پائپ لائن میں محفوظ گیس کے حجم میں اضافہ ہوا ہے۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ گیس کی کمی کے باعث سی این جی اسٹیشنز کو جمعرات کی رات 10 بجے سے گیس کی فراہمی معطل کردی گئی تھی جو ہفتے کی صبح تک جاری ہے۔
دوسری جانب وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے صوبے میں گیس کے تعطل پر شدید تحفظات کا اظہار کیا، جو ملک میں قدرتی گیس کی پیداوار میں سب سے زیادہ حصہ فراہم کرتا ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ گیس فراہمی میں تعطل سے نہ صرف گھریلو صارفین کو مشکلات کا سامنا ہے بلکہ اس سے صوبے کی معیشت کو بھی نقصان پہچ رہا ہے جبکہ یہ آئین کی دفعہ 158 کی بھی خلاف ورزی ہے۔
آئین کی دفعہ 158 کے مطابق ’جس صوبے میں قدرتی گیس کا کوئی سرچشمہ واقع ہو، اسے اس سرچشمہ سے ضروریات پوری کرنے کے سلسلے میں، ان پابندیوں اور ذمہ داریوں کے تابع، جو یومِ آغاز پر نافذ ہوں، پاکستان کے دیگر حصوں پر ترجیح دی جائے گی۔
وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ سندھ میں گیس کی پیداوار 2700 سے 3 ہزار ملین مربع فٹ فی دن (ایم ایم سی ایف ڈی) ہے جبکہ ایس ایس جی کی جانب سے صوبے کو 1200 ایم ایم سی ایف ڈی سے بھی کم گیس فراہم کی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 100 ارب کی کرپشن بے نقاب ہوگئی

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 100 ارب کی کرپشن بے نقاب ہوگئی

کراچی: سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں 100 ارب کی کرپشن بے نقاب ہوگئی، سندھ لوکل …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے