تمام اضلاع, اور تعلقہ, کی, سطح پر, نقشے تیار کیے جا چکے, ہیں اور, آن لائن, دستیاب ہیں

تمام اضلاع اور تعلقہ کی سطح پر نقشے تیار کیے جا چکے ہیں اور آن لائن دستیاب ہیں

کراچی: صوبائی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران قانون دانوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے سندھ کے ریونیو اور ریلیف منسٹر مخدوم محمود زمان نے کہا کہ صوبے کے تمام تر لینڈ ریونیو ریکارڈ کو جون 2018 تک ڈیجیٹل کردیا جانا چاہیے تھا لیکن فنڈز کی کمی کے سبب یہ عمل تعطل کا شکار ہے

لینڈ ریونیو کے ریکارڈ کو محفوظ بنانے کے 486.899 ملین روپے کے منصوبے اور بورڈ آف ریونیو کے سروے سیٹلمنٹ ڈپارٹمنٹ کو بہتر بنانے کا عمل جون 2019 تک مکمل کر لیا جائے گا کیونکہ صرف 20فیصد ریکارڈ کو ڈیجیٹائز کیا جا سکے گا۔
وزیر نے بتایا کہ زمینوں کے ریکارڈ کے پرانے رجسٹر سے 10ہزار صفحات کو کیمیائی اور ڈیجیٹل بنیادوں پر محفوظ بنایا گیا ہے اور حیدرآباد و سکھر کے سروے سیٹلمنٹ ڈپارٹمنٹ کے دفاتر میں بنائی گئی لیبارٹریز میں محفوظ کر دیا گیا ہے۔
ایک اور سوال کے جواب میں مخدوم زمان نے کہا کہ جغرافیائی معلوماتی سسٹم یونٹ کو بورڈ آف ریونیو میں بنایا گیا تھا تاکہ ریاست کی زمین پر قبضے کی جانچ کے لیے دیہہ اور تعلقہ کی سطح پر نشقوں کو ڈیجیٹائز کیا جا سکے۔
انہوں نے بتایا کہ تمام اضلاع اور تعلقہ کی سطح پر نقشے تیار کیے جا چکے ہیں اور آن لائن دستیاب ہیں۔
ایک اور سوال کے جواب میں وزیر نے تایا کہ مائیکرو فلم ٹیکنالوجی کی جگہ لینے کے لیے ہر ضلعی ہیڈ کوارٹر میں چھ ڈیجیٹل اسکیننگ یونٹ بنائے جا چکے ہیں۔ رجسٹرڈ ڈیڈز کو اسکین کیا جا چکا ہے اور ڈیٹا سینٹر میں محفوظ کردیا گیا ہے جس سے رجسٹرڈ ڈیڈز کی جانچ میں مدد ملے گی۔
یشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی نے صوبے میں خودکار رجسٹریشن اور اسٹیمپس سسٹم ایک سسٹم نصب کرے گا جس رواں سال نافذ کیا جائے گا۔
انہوں نے بتایا کہ گزشتہ تین سال کے دوران بورڈ آف ریونیو میں مختلف لوگوں کی جانب سے 2ہزار سے زائد کیس فائل کیے گئے ہیں جن کو منطقی انجام تک پہنچا دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

آپ ان اسٹیک ہولڈرز کو نہیں سنیں گے تو نیپرا یہاں کیوں آیا ہے

آپ ان اسٹیک ہولڈرز کو نہیں سنیں گے تو نیپرا یہاں کیوں آیا ہے

کراچی :عوامی سماعت ہوئی جس میں چیئرمین نیپرا توصیف ایچ فاروقی اور کراچی چیمبر کے سابق …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے