کھوکھر برادران, کی سرکاری, افسروں کی ملی بھگت, سے زمینوں, کی فردیں, جاری کی گئیں

کھوکھر برادران کی سرکاری افسروں کی ملی بھگت سے زمینوں کی فردیں جاری کی گئیں

لاہور: سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں جسٹس عمر عطاء بندیال کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 2رکنی بینچ نے کھوکھر برادران کی جانب سے زمینوں پر قبضوں سے متعلق ازخود نوٹس عملدرآمد کیس کی سماعت کی

رپورٹ میں عدالت کو بتایا گیا کہ کھوکھر برادران کی سرکاری افسروں کی ملی بھگت سے زمینوں کی فردیں جاری کی گئیں، 8ہزار 700کنال میں سے 402کنال اراضی غیرقانونی طور پر منتقل کی گئی۔
ڈی جی اینٹی کرپشن نے بتایا کہ رپورٹ میں کھوکھر برادران قصور وار پائے گئے ہیں، 5مقدمات درج کرلئے گئے۔
ایل ڈی اے کے وکیل نے بتایا کہ کھوکھر برادران نے چار جائیدادوں کے نقشے منظور کروائے، ایل ڈی اے کی جانب سے جرمانوں سے متعلق کھوکھر برادران کو نوٹسز جاری کر دیئے گئے ہیں۔
ڈی جی اینٹی کرپشن نے عملدرآمد رپورٹ جمع کروانے کیلئے ایک ماہ کی مہلت طلب کرلی۔
عدالت نے ایل ڈی اے، کمشنر، ڈپٹی کمشنر، ایس ایم بی آر اور اینٹی کرپشن کو مارچ کے دوسرے ہفتے تک رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

یہ بھی پڑھیں

حکومت طلال کے ایشو پر پوائنٹ اسکورنگ کررہی ہے

حکومت طلال کے ایشو پر پوائنٹ اسکورنگ کررہی ہے

لاہور: رانا ثنا اللہ نے کہا کہ طلال چوہدری پر شفاف تحقیقات کرکے عوام کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے