اغوا ہونے, والے نیورو سرجن, ابراہیم خلیل 48 روز, بعد رہا

اغوا ہونے والے نیورو سرجن ابراہیم خلیل 48 روز بعد رہا

کوئٹہ: ڈاکٹر ابراہیم خلیل کے اہلخانہ نے ان کی بازیابی کی تصدیق کردی ہے۔ سرجن ابراہیم خلیل کو 13 دسمبر کو اغوا کیا گیا تھا اور 48 روز بعد ان کی رہائی عمل میں آئی

قید سے رہائی کے بعد سرجن ابراہیم خلیل کافی کمزور نظر آئے اور ان کی داڑھی بھی بڑھی ہوئی تھی۔ جسمانی تشدد سے متعلق سوال کے جواب میں ابراہیم خلیل نے کہا کہ وہ ذہنی طور پر بہت پریشان ہیں کہ کسی سوال کا جواب نہیں دے سکتے، بہتر ہے کہ اس پر بعد میں بات کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ دو دن سے سو نہیں سکے اور رات کو ایسی دوائیں دی گئی ہیں کہ ذہن کام نہیں کررہا، لہذا انہیں بات کرنے کے لیے وقت دیا جائے۔
سرجن ابراہیم خلیل نے کہا کہ وہ اب بہتر محسوس کررہے ہیں، دعا کریں اللہ اور ٹھیک کردے، انہوں نے کہا کہ انشاءاللہ وہ میڈیا سے کھل کر بات کریں گے، میڈیا سمیت جس جس نے میری رہائی کے لیے کوشش کی اس کا شکریہ ادا کرتا ہوں، اللہ کرے یہ برائی ہمارے معاشرے سے ختم ہوجائے اور ایسا دوبارہ کسی کے ساتھ نہ ہو، پولیس ہو یا فوج ہو وہ ہمارے مددگار تھے، اللہ سب کو اجردے۔

یہ بھی پڑھیں

کوئٹہ کے, علاوہ بلوچستان کے, شمال میں دیگر پشتون آبادی, والے علاقوں, میں بھی, کاروبارِ زندگی, معطل

کوئٹہ کے علاوہ بلوچستان کے شمال میں دیگر پشتون آبادی والے علاقوں میں بھی کاروبارِ زندگی معطل

بلوچستان: ابراہیم ارمان دو روز قبل لورالائی میں پولیس کی جانب سے گرفتاری کی کوشش …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے