جمال خاشقجی کے قتل کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ

جمال خاشقجی کے قتل کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ

اقوام متحدہ نے جمال خاشقجی قتل کیس کا ٹرائل ناکافی قراردے دیا

اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ادارے نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل سے متعلق سعودی عرب کے ٹرائل کو ناکافی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس طرح کے ٹرائل سے شفافیت کا جائزہ نہیں لیا جاسکتا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے ادارہ انسانی حقوق کی ترجمان روینا شام داسانی نے بین الاقوامی اداروں کو ملوث کرکے معاملے کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ کردیا۔ روینا شام داسانی کا یہ مطالبہ سعودی پراسیکیوٹر کی جانب سے معاملے میں 5 مشتبہ افراد کو سزائے موت دئیے جانے کے مطالبے کے بعد سامنے آیا ہے، ان کہنا تھا کہ اقوام متحدہ نے ہمیشہ سزائے موت کی مخالفت کی ہے۔ اس سے قبل بھی انسانی حقوق کے کئی گروپ کی جانب سے جمال خاشقجی کے قتل کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ سامنے آچکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

آسٹریلیا میں مسلمان خواتین مذہبی تعصب کا نشانہ بن گئیں

آسٹریلیا میں مسلمان خواتین مذہبی تعصب کا نشانہ بن گئیں

آسٹریلیا میں نقاب پہنے دو خواتین کو مسلمان ہونے کی بناء پر مذہبی تعصب کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے